The news is by your side.

Advertisement

گلوکارہ میشا شفیع اورعلی ظفر تنازع میں‌ نیا موڑ‌ سامنے آگیا

کراچی: گلوکارہ میشا شفیع نے ایک بار پھر علی ظفر پر جنسی ہراسانی کا الزام عائد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق گلوکارہ میشا شفیع نے ایک بار پر علی ظفر پر جنسی ہراسانی کے الزام کو دہراتے ہوئے کہا ہے کہ میں اپنے موقف پر قائم ہوں علی ظفر نے مجھے جنسی ہراسانی کا نشانہ بنایا ہے۔

ایک ٹویٹ کا جواب دیتے ہوئے میشا شفیع کا کہنا تھا کہ صرف علی ظفر نے مجھے ہراساں کیا ہے لیکن انہوں نے میرے علاوہ کئی اور خواتین کو بھی ہراساں کیا ہے۔

میشا شفیع کا کہنا تھا کہ میری جانب سے علی ظفر کر الزام لگانے کے بعد سے آدھے درجن خواتین سامنے آئیں اور ان تمام خواتین نے بھی علی ظفر پر یہی الزام عائد کیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ گلوکارہ میشا شفیع نے علی ظفر پر جنسی ہراسانی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ علی ظفر نے انہیں ایک زائد بار جنسی طور پر ہراساں کیا ہے۔

علی ظفر نے ان الزامات پر میشا شفیع کو قانونی نوٹس بھیجا تھا جس کے مطابق میشا شفیع ان پر لگائے گئے الزامات واپس لیں ورنہ وہ ان پر 100 کروڑ ہرجانے کا دعویٰ دائر کردیں گے۔

یاد رہے کہ میشا کے وکیل بیرسٹرمحمد احمد پنسوٹا نے تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں نوٹس موصول ہوگیا ہے ہم جائزہ لے رہے ہیں، میشا کی جانب سے علی ظفر پر لگائے گئے تمام الزامات سچ پر مبنی ہے۔

گزشتہ روز میشا شفیع نے ہراسانی کے معاملے پر بیرسٹرمحمد احمد پنسوٹا اور خواتین کے حقوق کی وکیل نگہت داد کےذریعے قانونی جنگ لڑنے کا فیصلہ کیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات  کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں