The news is by your side.

Advertisement

اب کشمیریوں کے حقوق نہیں تشخص کو مٹانے کی بات ہورہی ہے: شاہ محمودقریشی

اسلام آباد: وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ آج یوم آزادی کشمیریوں کے ساتھ یوم یکجہتی کے طور پر منا رہے ہیں، پاکستان کا بچہ بچہ کشمیریوں بھائیوں کے ساتھ کھڑا ہے۔

اسلام آباد میں ’’یکجہتی کشمیر ریلی‘‘ سے خطاب کرتے ہوئے شاہ محمودقریشی کا کہنا تھا کہ اب کشمیریوں کے حقوق نہیں تشخص کو مٹانے کی بات ہورہی ہے ، کیا مقبوضہ کشمیر میں خوشحالی کرفیو کے سائے میں آئے گی؟۔

انہوں نے کہا کہ مقبوضہ وادی میں آج اشیائے ضروریہ کی شدید قلت ہے، مطالبہ کیا ہے اسکی تفصیلات قوم کی سامنے پیش کردی ہے، سلامتی کونسل سے ہنگامی اجلاس کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم سے مشاورت میں کہا یہ ہمارا تاریخی مطالبہ ہے، سوئے ہوئے ضمیروں کو جگانہ ہوگا، نریندر مودی کا ہٹلر حکومت سے نظریہ ملتا ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مودی کرفیو اٹھا کر کشمیریوں کو رائے اظہار کرنے کا موقع دے، دودھ کا اور پانی کا پانی ہوجائے گا، امید ہے حق اور سچ کی فتح ہوگی۔

پاکستان نے مقبوضہ کشمیر پر سلامتی کونسل کا اجلاس بلانے کا مطالبہ کر دیا

شاہ محمود قریشی کا خطاب کے دوران کہنا تھا کہ بھارتی سپریم کورٹ کو کشمیریوں کی پٹیشن ارسال کردی ہے، بھارتی سپریم کورٹ میں انصاف کرنے کی ہمت ہے؟

انہوں نے سوال اٹھایا کہ کیا بھارتی سپریم کورٹ نے مودی سرکار کے سامنے گھٹنے ٹیک دیے؟ کل لندن، امریکا اور یورپ میں باضمیر لوگ یوم سیاہ منائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں