The news is by your side.

Advertisement

کراچی بدامنی کیس : عدالت نے پیرول پر رہا ملزمان کی رپورٹ مسترد کردی

کراچی : سپریم کورٹ نے کراچی بدامنی کیس میں پیرول پر رہا ہونے والے ملزمان کی رپورٹ مسترد کر دی۔ عدالت کے ریمارکس تھے کہ سندھ حکومت نے متوازی نظام قائم کر رکھا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی بدامنی کیس کی سماعت سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی صدارت میں تین رکنی بنچ نے کی۔ عدالت نے اگلی سماعت پر پیرول کمیٹی کے سربراہ نیاز عباسی کو رپورٹ کے ساتھ طلب کر لیا۔

عدالت کو بتایا گیا کہ ایک سال کے دوران پچیس ملزمان کو اچھے چال چلن پر رہا کیا گیا۔ چیف جسٹس نے سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ اس طرح مجرموں کو چھوڑا جائے گا تو عدلیہ کیا کرے۔

اس حوالے سے ایڈووکیٹ جنرل سندھ کا کہنا تھا کہ یہی رولز ہیں جن کے تحت ملزمان کو پیرول پر چھوڑاجاتا ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ اگر یہی رولز ہیں تو اسی فیصد جرائم پیشہ ملزمان کو رہا کردیں۔ اب تو ایسے کرمنلز بھی ہیں جو پی ایچ ڈی ہیں۔

ڈائریکٹر پیرول نے عدالت کو بتایا کہ مجرموں کو قانون کے مطابق چھوڑا گیا ہے۔ عدالت کے ریمارکس تھے کہ سندھ حکومت نے متوازی نظام قائم کر رکھا ہے۔

سپریم کورٹ نے چار سو آٹھ مقدمات اے کلاس کیے جانے پر سرزنش کی اور پچھلے سال کے اکیاسی اے کلاس مقدمات پر رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔ کیس کی آئندہ سماعت پندرہ جولائی کو ہو گی۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں