The news is by your side.

Advertisement

“منصوبوں، اداروں اور عمارتوں کے نام بدلنے سے بینظیر بھٹو کا نام نہیں مٹاسکتے”

کراچی:چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام (بی آئی ایس پی) کا نام تبدیل کرنے پر وفاقی حکومت کو آڑے ہاتھوں لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اپنے بیان میں بلاول بھٹو نے کہا کہ پی پی حکومت نے غربت کی کمی کیلئے بی آئی ایس پی شروع کیا، عمران خان نے بی آئی ایس پی کا نام بدل ڈالا، پیپلزپارٹی نےایسے وقت میں پروگرام شروع کیاجب معاشی بحران تھا، عمران خان بتائیں غربت میں کمی کیلئے اب تک کیا کیا؟۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ عوام کوپتہ ہے احساس کفالت پروگرام دراصل بی آئی ایس پی ہی ہے، عمران خان کی غربت میں کمی کے پروگرام کی چوری پکڑی جاچکی، عمران خان بی آئی ایس پی کا نام کچھ بھی رکھ دیں، عوام سب جانتے ہیں۔

اپنے بیان میں بلاول بھٹو نے کہا کہ بی آئی ایس پی دراصل بینظیربھٹو کا آئیڈیا تھا جسےعملی جامہ پہنایا، پیپلزپارٹی نے بڑے سماجی بہبود کےپروگرام لا کردنیا میں مثال قائم کی، عالمی ادارے پیپلزپارٹی دور کےبی آئی ایس پی کی اہمیت کا اعتراف کررہےہیں، عدالت میں اعتراف کے باوجود احساس پروگرام کو نیا منصوبہ قراردینادھوکاہے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ منصوبوں، اداروں اور عمارتوں کے نام بدلنے سے بینظیر بھٹو کا نام نہیں مٹاسکتے، جھوٹ، دھوکے کو یوٹرن کا نام دے کر فخر کرنا انکے مزاج کاحصہ بن چکا، پی پی نے معاشی سونامی میں سندھ کی لاکھوں دیہی خواتین کوفنی تربیت دی، سندھ میں 27لاکھ دیہی خواتین کوکاروبار کیلئے بلاسود قرضے دئیے، پی پی کی سندھ حکومت نےعوام دوست اقدامات سےفی کس آمدنی کوبڑھایا، سندھ میں غربت کی شرح میں غیرمعمولی7.6فیصد کمی ثبوت ہے پی پی نےڈلیور کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں