site
stats
عالمی خبریں

کیا ٹرمپ نے امریکی آئین پڑھا ہے؟

واشنگٹن: عراق میں جاں بحق ہونے والے امریکی مسلمان فوجی اہلکار کے والد خضر خان نے ڈونلڈ ٹرمپ کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ان سے سوال کیا ہے کہ کیا ٹرمپ نے کبھی امریکا کا آئین پڑھا ہے؟

ڈیموکریٹس کے نیشنل کنونشن میں پاکستانی نژاد خضر خان نے اپنا تعارف ایک حب الوطن امریکی مسلمان کے طور پر کروایا۔ انہوں نے بتایا کہ ان کا بیٹا ہمایوں خان امریکی فوجی اہلکار تھا جو عراق جنگ میں ہلاک ہوا۔

خضر خان کے مطابق میدان جنگ میں اس نے اپنے خوابوں کو قربان کیا اور اپنے ساتھیوں کی جان بچانے کے لیے اپنی جان قربان کی۔

ٹرمپ کے خلاف ہالی ووڈ اداکار بھی میدان میں *

اوباما کے بھائی کا ٹرمپ کو ووٹ دینے کا اعلان *

صدر بنا تو حجاب پہننے والی خواتین کو نوکریوں سے نکال دوں گا: ٹرمپ *

انہوں نے کہا کہ ہماری امریکا سے حب الوطنی غیر منقسم ہے اور ہم نے امریکا کے لیے قربانیاں دیں ہیں۔ لیکن ڈونلڈ ٹرمپ نے کیا قربانی دی؟ وہ اپنی حب الوطنی کیسے ثابت کریں گے جبکہ انہوں نے امریکا کے لیے کوئی قربانی نہیں دی۔

خضر خان نے ٹرمپ سے سوال کیا کہ کیا انہوں نے امریکا کا آئین پڑھا ہے۔ وہ بخوشی اپنی کاپی انہیں دینے کو تیار ہیں تاکہ وہ امریکا کا آئین پڑھ سکیں۔ انہوں نے ٹرمپ کو مشورہ دیا کہ وہ اس میں آزادی، اور قوانین کے یکساں اطلاق کے الفاظ کو غور سے پڑھیں۔

khizar-2

پاکستانی نژاد خضر خان کا ٹرمپ سے سوال تھا کہ کیا وہ کبھی فوجیوں کے قبرستان گئے ہیں؟ اگر نہیں تو وہ وہاں ضرور جائیں تاکہ انہیں معلوم ہو کہ امریکا کے لیے جانیں قربان کرنے والوں میں ہر مذہب، ہر نسل اور ہر صنف کے افراد شامل ہیں۔

خضر خان نے ٹرمپ پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ٹرمپ مستقل مسلمانوں کے خلاف بولتے رہے ہیں۔ وہ اقلیتوں، ججوں، خواتین یہاں تک کہ اپنے پارٹی لیڈرز تک کے خلاف بات کرتے ہیں۔ وہ صرف دیواریں بنانا، اور پابندیاں لگانا جانتے ہیں۔

خضر خان کی تقریر کے دوران کئی حاضرین جذباتی ہو کر رونے لگے جبکہ ان کے ہر جملے پر ہال تالیوں سے گونجتا رہا۔

واضح رہے کہ امریکی صدارتی انتخاب کے لیے ہیلری کلنٹن نے ڈیمو کریٹک پارٹی کی نامزدگی قبول کرلی ہے۔ رواں برس 8 نومبر کو ہیلری کلنٹن اور ڈونلڈ ٹرمپ میں عہدہ صدارت کے لیے مقابلہ ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top