site
stats
شاعری

خوب روکا شکایتوں سے مجھے

خوب روکا شکایتوں سے مجھے
تونے مارا عنایتوں سے مجھے

بات قسمت کی ہے کہ لکھتے ہیں
خط وہ کن کن کنایتوں سے مجھے

واجب القتل اُس نے ٹھہرایا
آیتوں سے، روایتوں سے مجھے

حالِ مہر و وفا کہوں تو ، کہیں
نہیں شوق ان حکایتوں سے مجھے

کہہ دو اشکوں سے کیوں ہوکرتے کمی
شوق کم ہے کفایتوں سے مجھے

لے گئی عشق کی ہدایت ذوق
اُس سرے سب نہایتوں سے مجھے​

**********

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top