The news is by your side.

Advertisement

سعودی مفتی اعظم 35 سال بعد خطبہ حج نہیں دے سکیں گے

مکہ مکرمہ : پینتیس برس سے مسلسل خطبہ حج دینے والے سعودی مفتی اعظم شیخ عبدالعزیز بن عبداللہ علیل ہوگئے۔ اس سال خرابی صحت کے باعث خطبہ حج نہیں دےسکیں گے۔ ان کی جگہ شیخ صالح بن حُمَید یہ فریضہ انجام دیں گے۔

تفصیلات کے مطابق انیس سو اکیاسی سے مسلسل خطبہ حج سنانے والے شیخ عبدالعزیز اس سال خطبہ نہیں دیں گے۔ پچھترسالہ شیخ عبدالعزیز گزشتہ پینتیس سالوں سے خطبہ حج دے رہے تھے۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق شیخ عبدالعزیزخرابی صحت کے باعث خطبہ حج نہیں دے سکیں گے۔ سعودی میڈیا کے مطابق شیخ صالح بن حُمَید ان کی جگہ فرائض انجام دیں گے، جبکہ عبدالرحمان السُدیس کےنام بھی زیرغور ہیں۔

مفتی اعظم شیخ عبدالعزیز چودہ سو تین سے چودہ سو چھتیس ہجری تک مسلسل حج کے خطیب رہے۔ اس کے علاوہ مسجد نمرہ میں نماز ظہر و عصر کی اذان کیلئے حرم مکی کے مؤذن شیخ حماد بقری کو مقرر کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ مفتی اعظم سعودی عرب 1981 سے مسلسل خطبہ حج کے فرائض سرانجام دے رہے ہیں جنہیں 1999 میں شیخ عبدالعزیز بن باز کے انتقال کے بعد مفتی اعظم کی ذمہ داریاں سونپی گئیں۔

مفتی اعظم سعودی عرب کی عالم دین کونسل اور افتاء کونسل کے چیئرمین بھی ہیں۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں