site
stats
انٹرٹینمںٹ

ماہرہ خان اور مومنہ ایشیائی پرکشش خواتین کی فہرست میں شامل

لندن: پاکستانی اداکارہ ماہرہ خان ایک بار پھر ایشیاء کی پرکشش خاتون کی فہرست میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوگئیں جبکہ فہرست میں گلوکارہ مومنہ مستحسن کا نام بھی شامل ہے۔

برطانوی جریدے ایسٹرن آئی کی جانب سے  سال 2017 کی خوبصورت خواتین کی فہرست جاری کی گئی جس کے مطابق بالی ووڈ اداکارہ پریانکا چوپڑا ایشیاء کی پرکشش خواتین کی فہرست میں اول نمبر پر رہیں جبکہ ماہرہ خان پاکستان کی پہلی اور ایشیاء کی پانچویں پرکشش خاتون قرار پائیں۔

فہرست کے مطابق بھارتی اداکارہ نہیا شرما دوسرے جبکہ دپیکا پڈوکون تیسرے اور چوتھے نمبر پر عالیہ بھٹ جگہ بنانے میں کامیاب رہیں۔

ایسٹر ن آئی کے مطابق گزشتہ برس پرکشش خواتین کی فہرست میں اول آنے والی اداکارہ دپیکا پڈوکون کی درجہ بندی میں تنزلی ہوئی جس کے بعد وہ تیسرے نمبر پر آگئیں۔

علاوہ ازیں پاکستانی گلوکارہ مومنہ مستحسن بھی پرکشش خواتین کی فہرست میں 37 ویں نمبر پر رہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق لندن کے جریدے نے 2017 میں پرکشش نظر آنے والی ایشیائی خواتین کے حوالے سے سروے کروایا جس میں سب سے زیادہ ووٹ پریانکا چوپڑا نے حاصل کیے۔

اس موقع پر بالی ووڈ اداکارہ نے اعزاز ملنے پر اپنے والدین اور مداحوں کا شکریہ ادا کیا اور بتایا کہ پانچویں بار یہ اعزاز ملنے کا سہارا ان ہی لوگوں کی وجہ سے ممکن ہوا۔

واضح رہے کہ گزشتہ برس برطانوی جریدے کی جانب سے جاری کردہ فہرست میں ماہرہ خان 9 ویں نمبر پر آئیں تھیں تاہم اس بار انہوں نے 4 درجے ترقی کی اور بالی ووڈ اداکارؤں کو پیچھے چھوڑ دیا جبکہ دو سال قبل جاری ہونے والی فہرست میں پاکستانی اداکارہ کا 10 واں نمبر تھا۔

خیال رہے پاکستانی اداکارہ ماہرہ خان نے مختلف پاکستانی ڈراموں میں شاندار کارکردگی حاصل کر کے خوب داد وصول کی جس کے بعد بالی ووڈ فلم کے ہدایت کاروں نے ان سے رابطہ کر کے فلم میں کام کرنے کی  پیش کش کی۔

ماہرہ خان نے بھارتی فلموں میں کام کرنے کی حامی بھری تو قسمت اُن پر مہربان ہوئی جس کے بعد وہ کنگ خان کے ساتھ فلم ’’رئیس‘‘ میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوئیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top