The news is by your side.

Advertisement

‘خود کش دھماکا کرنے والی شاری بلوچ کا جامعہ کراچی میں کوئی تعلیمی ریکارڈ نہ ملا’

کراچی : جامعہ کراچی کے رجسٹرار کا کہنا ہے کہ دھماکے میں ملوث شاری بلوچ کا جامعہ کراچی میں کوئی تعلیمی ریکارڈ نہیں۔

تفصیلات کے مطابق جامعہ کراچی کے رجسٹرار کی جانب سے بیان میں کہا گیا ہے کہ دھماکے میں ملوث شاری بلوچ کاجامعہ کراچی میں کوئی تعلیمی ریکارڈنہیں، اس نام کی ایک خاتون فزکس ڈپارٹمنٹ میں تھی جو پاس آؤٹ ہوچکی۔

رجسٹرارجامعہ کراچی کا کہنا تھا کہ جامعہ کراچی میں ہر سال 40ہزار سے زائد طلبا و طالبات پاس آؤٹ ہوتے ہیں ، ان سب کے ریکارڈ کی چھان بین کی گئی ہے۔

خیال رہے کراچی یونیورسٹی کے اطراف سے شواہد اکٹھے کرنے کا سلسلہ جاری ہے جبکہ جامعہ کراچی میں تعلیمی سرگرمیاں معطل ہیں۔

گذشتہ روز جامعہ کراچی کے اندر ایک خاتون نے خود کش دھماکے کے ذریعے چینی باشندوں کی وین کو نشانہ بنایا تھا ، جس کے نتیجے میں تین چینی اساتذہ سمیت چارافراد جان بحق اور 3 زخمی ہوگئے تھے۔

یاد رہے جامعہ کراچی میں خودکش دھماکا کرنے والی خاتون کی شناخت شیری بلوچ کے نام سے ہوئی تھی ، تفتیشی ذرائع کا کہنا تھا کہ حملہ آور زولوجی ڈیپارٹمنٹ سے ایم فل کر رہی تھی اور 6 ماہ سےکراچی میں رہائش پذیرتھی۔

خاتون کے والد حال ہی میں بلوچستان سے گریڈ بیس میں ریٹائرہوئے جبکہ شوہر اور بہن ڈاکٹر اور بھائی ملازمت پیشہ ہیں تاہم اب تک اس کےخاندان کاکوئی کرمنل ریکارڈ نہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں