The news is by your side.

Advertisement

سال 2018: سندھ میں پولیو کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا

کراچی: انسداد پولیو ٹاسک فورس کے اجلاس کے دوران بتایا گیا کہ سال 2018 میں صوبہ سندھ میں پولیو کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا۔

تفصیلات کے مطابق نگراں وزیر اعلیٰ سندھ فضل الرحمٰن کی زیر صدارت انسداد پولیو ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا۔

اجلاس میں لاڑکانہ، سکھر، حیدر آباد اور میر پور خاص کے کمشنرز نے بھی شرکت کی۔

اجلاس میں بریفنگ دی گئی کہ سال 2018 میں صوبہ سندھ میں پولیو کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا تاہم کراچی کے یو سی 4 گڈاپ اور مچھر کالونی میں تاحال پولیو وائرس موجود ہے۔

مزید پڑھیں: انسداد پولیو جنگ میں پاکستان کی کامیابیوں کا عالمی اعتراف

اجلاس میں بتایا گیا کہ نجی اسکولوں میں پولیو کی ٹیم کے ساتھ تعاون نہیں کیا جاتا۔

اس موقع پر وزیر اعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ پولیو کا خاتمہ ہمارا قومی فریضہ ہے، مل کر اس کو ختم کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ان تمام اداروں کا شکر گزار ہوں جو انسداد پولیو مہم میں مدد کر رہے ہیں۔

وزیر اعلیٰ نے پرائیویٹ اسکولوں کے لیے اعلامیہ جاری کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا پابند کیا جائے کہ کہ بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کے لیے ٹیم کے ساتھ تعاون کیا جائے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں