The news is by your side.

Advertisement

ترکی: ناکام فوجی بغاوت کا ایک سال مکمل،7 ہزار افراد نوکریوں سے برطرف

انقرہ: ترکی میں ناکام فوجی بغاوت کا ایک سال مکمل ہوگیا، ترک حکومت نے اس دوران مختلف سرکاری اداروں سے 7 ہزار سے زائد ملازمین برطرف کیے۔

تفصیلات کے مطابق ترکی کے  ایک فوجی گروہ نے گزشتہ سال 15 جولائی کو بغاوت کرنے کی کوشش کی اور ترکی کی سڑکوں پر بھاری نفری نکل آئی تاہم ترک صدر کا بیان سامنے آتے ہی عوام نے اپنے اتحاد سے مسلح فوجیوں کو پسپا کیا جس کی وجہ سے بغاوت ناکام ہوئی۔

ناکام بغاوت کے بعد ترک حکومت نے ایک سال کے دوران شک کی بنیاد پر مختلف سرکاری اداروں سے 7 ہزار سے زائد لوگوں کو برطرف کیا جن میں ملٹری، پولیس اور تعلیم ادارے بھی شامل ہے۔

پڑھیں: ترکی میں فوجی بغاوت کی سیاہ تاریخ

ہزاروں لوگوں کو برطرف کرنے کی وجہ بیان کرتے ہوئے ترک حکومت نے کہا کہ ملکی سیکورٹی کے خلاف کام کرنے اور دہشت گرد تنظیم سے تعلق رکھنے والے افراد کو نوکریوں سے فارغ کر کے قانون کے مطابق سزا دی گئی۔

مزید پڑھیں: دنیا بھر میں ہونے والی فوجی بغاوتیں

یاد رہے ناکام فوجی بغاوت  کے بعد ڈیڑھ لاکھ سے زائد اہلکار برطرف ہیں جبکہ فوج، پولیس اور دیگر اداروں سے پچاس ہزار افراد کو گرفتار کیا جاچکا ہے۔ ترک حکومت نے ناکام فوجی بغاوت کی ذمہ داری جلاوطن رہنمافتح اللہ گولن پرعائد کی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں