The news is by your side.

Advertisement

ًملک میں آن لائن منشیات فروخت ہورہی ہے: ایف آئی اے کا سپریم کورٹ میں انکشاف

اسلام آباد: ایف آئی اے نے سپریم کورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ پاکستان میں انٹرنیٹ کے ذریعے آن لائن منشیات کی فروخت ہورہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں ایک کیس کی سماعت کے دوران ایف آئی نے انکشاف کیا کہ وائی فائی کے ذریعے بڑے پیمانے پر منشیات بیجی جارہی ہے۔

ایف آئی اے نے سپریم کورٹ کو بتایا کہ لاہور سے انٹرنیٹ کے ذریعے بکنے والی کچھ منشیات پکڑی گئیں ہیں۔

سماعت کے دوران اٹارنی جنرل نے بتایا گرے ٹریفکنگ سے سالہ پانچ سے چھ کروڑ کا کاروبار ہوتا ہے، بچے ہیروئنچی بن رہے ہیں۔

ایف آئی اے نے گرے ٹریفکنگ کے کتنے نیٹ ورک پکڑے؟ ‘چیف جسٹس

سپریم کورٹ نے سماعت کے دوران اظہار برہمی کرتے ہوئے کہا کہ اے این ایف کیا کررہی ہے؟ کورٹ نے اگلی سماعت میں اینٹی نارکوٹکس فورس کے ڈائریکٹر جنرل کو طلب کرلیا۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز گرے ٹریفکنگ سے متعلق سپریم کورٹ میں کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیے تھے کہ ڈش باکس اسمگلنگ کے ذریعے پاکستان آتے ہیں۔

یاد رہے کہ 8 اکتوبر کو گرے ٹیلی کمیونیکیشن ٹریفک ازخود نوٹس کی سماعت کے دوران سپریم کورٹ نے ڈی جی ایف آئی اے کی سربراہی میں تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں