The news is by your side.

Advertisement

“کچے کے ڈاکوؤں کے سرپرست پکے کے ڈاکو ہیں”

کراچی: سندھ اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ نے وزیراعلیٰ سندھ کے خلاف مزید پٹیشن دائر کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حلیم عادل شیخ نے کہا کہ سندھ میں زرعی پانی کی چوری، کتوں کے کاٹنے اور گندے پانی کی فراہمی کیخلاف عدالت میں درخواست دائر کررہے ہیں۔

حلیم عادل نے کہا کہ وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کےخلاف اربوں روپوں کی کرپشن کی نیب میں انکوائری ہے، ہمارا مطالبہ ہے کہ سندھ میں 43لاکھ ایکڑ اراضی کی جعلی الاٹمنٹ کی جوڈیشل انکوائری ہونی چاہیے، جعلی الاٹمنٹ میں ملوث افسران نے 10لاکھ ایکڑ زمین کی جعلی الاٹمنٹ کرکے ریکارڈ جلا دیا ہے، ہم سپریم کورٹ میں جعلی الاٹمنٹ کیخلاف درخواست دےرہےہیں۔

اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ سندھ ہائی کورٹ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سندھ اسمبلی سے نا امید ہوچکے، ایوان میں صرف اپنے قوانین بنائے جاتے ہیں۔

حلیم عادل نے الزام عائد کیا کہ جیکب آباد میں پولیس کے سپاہیوں کو قتل کرنے والے ڈاکو صوبائی وزیر کے محافظ ہیں، کچے کے ڈاکوؤں کے سرپرست پکے کے ڈاکو ہیں، نیب چھاپوں کے بعد کچے کے ڈاکو محمد میاں سومرو کو دھمکیاں دے رہے ہیں۔

حلیم عادل شیخ نے انکشاف کیا کہ بلاول بھٹو کے زیر استعمال جہاز سندھ حکومت کا ہے، بتایا جائے کہ کس قانون کے تحت وزیر اعلیٰ کا جہاز بلاول استعمال کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ اس سے قبل وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی نااہلی کے خلاف عدالت عظمیٰ میں پٹیشن دائر کرنے کا اعلان کرچکے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں