site
stats
پاکستان

ذوالفقارعلی کی پھانسی رکوانے انڈونیشیا میں پاکستان کے سفیر سرگرم ہوگئے

جکارتہ: انڈونیشیا میں پاکستانی شہری کو سزائے موت دیے جانے کے فیصلے کی خبریں میڈیا پر آنے کے بعد پاکستانی حکام حرکت میں آگئے ہیں،انڈونیشیا میں پاکستان کے سفیر عاقل ندیم انڈونیشی صدر سے ملاقات کے لیے سرگرم ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق منشیات کی اسمگلنگ کے الزام میں پاکستانی شہری انڈونیشئین پولیس کی زیر حراست ہے،جنہیں پھانسی کی سزا سنا دی گئی ہے اور سزا پرعمل درآمد کے لیے محض 12 گھنٹے رہ گئے ہیں،ذوالفقار کے اہل خانہ اور اہل علاقہ کا احتجاج بھی جا ری ہے جس کی خبریں میڈیا پر آنے کے بعد سے انڈونیشیا میں پاکستانی سفارت خانہ بھی متحرک ہو گیا ہے۔

ali

ذرائع کے مطابق پھانسی کی سزا پر عمل درآمد روکوانے کے لیے انڈونیشیا میں پاکستان کے سفیر عاقل ندیم ایک ایسی تقریب میں پہنچ گئے ہیں جہاں انڈونیشیا کے صدر سے اُن کی ملاقات متوقع ہے، پاکستانی سفیر تقریب میں انڈونیشیئن صدر کی موجودگی کا فائدہ اُٹھاتے ہوئے ذوالفقار علی کی پھانسی کی سزا پر براہ راست رحم کی اپیل کریں گے۔

ali-post-1

اس سے قبل میڈیا سے بات کرتے ہوئے پاکستانی سفیر نے مؤقف اپنا یا کہ ذوالفقار کیس میں انصاف کے تقاضے پورے نہیں کیے گئے لہذا سزائے موت پر عمل درآمد کو مؤخر کرکے ازسرِ نو صاف اور شفاف ٹرائل کیا جائے۔

zulfi 2

دوسری جانب اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون نے انڈو نیشین حکومت کو 14افراد کی سزائے موت سے روکنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ سزائے موت شدید نوعیت کے جرائم میں دی جانی چاہیے ،منشیات سے متعلق جرائم شدید نوعیت کے نہیں ہوتے کہ سزائے موت کا فیصلہ دیا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top