The news is by your side.

Advertisement

پینٹاگون نے یوکرین کے لیے لڑاکا طیارے امریکی اڈے بھیجنے پر کیا کہا؟

واشنگٹن: پینٹاگون نے یوکرین کے لیے لڑاکا طیارے امریکی اڈے بھیجنے کی پولینڈ کی پیش کش مسترد کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پولینڈ کی جانب سے جرمنی میں موجود امریکی اڈے پر یوکرین منتقل کرنے کے لیے جنگی طیارے بھیجنے کی پیش کش کی گئی تھی۔

پینٹاگون کے پریس سیکریٹری جون کربی نے بدھ کو میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ وزیر دفاع لائیڈ آسٹن اور پولینڈ کے وزیر دفاع ماریُوز بلاسززاک نے ٹیلیفون پر بات چیت کی ہے، جس میں واشنگٹن نے امریکا سے متبادل طیاروں کے بدلے مِگ 29 لڑاکا جیٹ طیارے بھیجنے کی پولینڈ کی پیشکش رد کر دی۔

مگ 29 طیارے اڑانے کے لیے یوکرینی پائیلٹ تربیت یافتہ ہیں، تاہم کوئی بھی ملک یہ طیارے یوکرین کو فراہم کرنے کے لیے تیار نہیں ہیں، روس نے رواں ہفتے خبردار کیا تھا کہ جو ممالک حملوں کے لیے یوکرین کو ہوائی اڈے فراہم کریں گے وہ اس تنازعے میں براہِ راست ملوث سمجھے جائیں گے۔

تاہم یوکرینی صدر ولودیمیر زیلنسکی ایک طاقت ور فوجی مدد پر زور دیتے رہے ہیں جس میں دیگر ملکوں سے لڑاکا طیارے بھی شامل ہیں۔

جرمنی نے آنکھیں پھیر لیں

کربی نے کہا کہ امریکا، یوکرین کو فضائی دفاع اور بکتر شکن نظاموں سمیت مختلف ہتھیار فراہم کر رہا ہے، جو حملے روکنے میں مدد دے رہے ہیں، لیکن لڑاکا جیٹ طیاروں کی فراہمی کو غلط طور پر معاملے کو بڑھانے والا سمجھا جا سکتا ہے۔

امریکا کا مؤقف ہے کہ اگر یوکرین کو لڑاکا طیارے فراہم کیے گئے تو روس کی جانب سے اس کے نتیجے میں واضح ردِ عمل آ سکتا ہے، جس سے نیٹو کے ساتھ فوجی تناؤ بڑھنے کے امکانات میں بھی اضافے کا امکان ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں