The news is by your side.

Advertisement

کرسچن کالونی میں دہشت گردوں کا حملہ ناکام،4دہشت گرد ہلاک

پشاور : صوبہ خیبر پختونخواکے شہر پشاور میں ورسک روڈ پر واقع کرسچن کالونی پر دہشت گردوں کے حملے کے بعد جوابی کارروائی میں چاروں دہشت گرد ہلاک ہوگئے.

تفصیلات کے مطابق پشاور کے علاقے ورسک روڈ پر صبح سویرے کرسچن کالونی میں دہشت گرد کالونی میں داخل ہوئے تو سیکورٹی فورسز کے ساتھ فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس میں چاروں دہشت گرد مارے گئے.

آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے ورسک روڈ پرسیکورٹی فورسز کی جانب سے دہشت گردوں کاحملہ ناکام بنانے پرسیکورٹی فورسز کو خراج تحسین پیش کیا گیا ہے.

مردان میں خودکش دھماکہ،7افراد جاں بحق

پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے کہا کہ سیکورٹی فورسز کی بروقت کارروائی سے دہشت گردوں کو ناکامی ہوئی.

اس سے قبل ڈی جی آئی ایس پی آر لیفٹیننٹ جنرل عاصم باجوہ سلیم باجوہ نےسماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹویٹ کی جس میں انہوں نے پاک فوج کی جانب سے چارخودکش بمباروں کو ورسک روڈ پر ہلاک کرنے کی تصدیق کی.

آئی ایس پی آر کے مطابق ورسک روڈ اور اس کے اطراف کے علاقوں میں سرچ آپریشن مکمل کرلیاگیا.

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق چار حملہ آور پانچ بج کر پچاس منٹ پر کرسچن کالونی میں داخل ہوئے تاہم سیکورٹی فورسز نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے دہشت گردوں کو گھیرلیا اور فائرنگ کے تبادلے میں چاروں دہشت گرد مارے گئے.

ورسک روڈ پر دہشت گردوں کے حملے میں زخمی ہونےوالوں کو اسپتال منتقل کردیاگیا.

آپریشن میں فائرنگ کے تبادلے میں سیکورٹی فورسز کے دو ایف سی کے جوان اور ایک پولیس اہلکار، دو سول گاڑدز زخمیہوئے جبکہ دہشت گردوں کی فائرنگ سے 3 مقامی افراد زخمی ہوگئے.

دہشت گردوں نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا: کرنل نعیم

پشاور حملے پر کرنل نعیم اللہ خان نے پریس بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ سیکیورٹی فورسز نے بروقت رسپانڈ کرتے ہوئے دہشت گردوں کے مذموم ارادوں کو ناکام بنایا ہے ۔

ان کا کہنا تھا کہ دہشت گرد کالونی کے مرکزی گیٹ تک پہنچنے میں کامیاب ہوگئے تھے تاہم سیکیورٹی فورسز نے انہیں قریب ہی واقع زیرِ تعمیر عمارت میں گھیر لیا۔ دہشت گرد دستی بم ‘ ایس ایم جی گنوں اور خود کش جیکٹ سے مسلح تھے۔

سیکیورٹی فورسز کی جانب سے کیے گئے سخت محاصرے کو نہ توڑ پانے کے سبب دہشت گردوں نے یکے بعد دیگرے خود کو دھماکے سے اڑا لیا ۔ خوش قسمتی سے اس واقعے میں مسیحی برادری اور سیکیورٹی فورسز کے جوان بالکل محفوظ رہے۔

واضح رہے کہ آئی جی ایف سی میجر جنرل شاہین مظہر آپریشن کی خود نگرانی کررہے تھے.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں