The news is by your side.

Advertisement

کسی بچے کو روتا ہوا نہیں دیکھ سکتا، فلائٹ پرسر نے واقعے کی حقیقت بیان کردی

کراچی : پی آئی اے کی پرواز میں گزشتہ روز ایک مسافر کے روتے ہوئے بچے کو چپ کرانے کی ویڈیو وائرل ہوئی، یہ کارنامہ پی آئی اے کے فلائٹ پرسر وحید احمد داؤد پوتہ نے انجام دیا تھا۔

اطلاع کے مطابق اسلام آباد سے کراچی آنے والی پرواز میں جب ایک چھوٹے سے بچے نے رونا شروع کردیا تو اس کی والدہ پریشان ہوگئیں، فضائی میزبان نے ان کی پریشانی کو دیکھتے ہوئے بچے کو گود میں اٹھا کر چپ کروایا جس کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئیں۔

فضائی میزبان کی اس خدمت کے اعتراف میں اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں پی آئی اے کے فلائٹ پرسر وحید احمد داؤد پوتہ کو مدعو کیا گیا جنہوں نے اس واقعے سے متعلق تفصیل سے آگاہ کیا۔

وحید احمد نے بتایا کہ کہ مجھے اس بات علم ہی نہیں تھا کہ میری تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے اور نہ ہی اس بات کا اندازہ تھا کہ بچے کو چپ کراتے ہوئے میری کوئی تصویر بنا رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ کام میری ڈیوٹی کا حصہ ہے میرا فرض ہے کہ میں بحیثیت “کیبن کرو” اپنے مہمان مسافروں کا ہر طرح سے خیال رکھوں۔

انہوں نے بتایا کہ میرا تعلق شکار پور سے ہے اور میں پی آئی اے سے گزشتہ 34سال سے وابستہ ہوں اور ایسے کئی واقعات پہلے بھی ہوچکے ہیں کیونکہ میں کسی بچے کو روتا ہوا دیکھوں تو مجھ سے رہا نہیں جاتا۔

مزید پڑھیں : پی آئی اے عملے کی روتے بچے کو چپ کرانے کی تصاویر وائرل

انہوں نے ایک افسوسناک واقعہ بیان کرتے ہوئے بتایا کہ میرے تین بچے ہیں، سال2019میں میرا ایک جوان بیٹا کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہوگیا تھا جس کا غم تب سے میرے ساتھ ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں