site
stats
اے آر وائی خصوصی

بغیر استری کے کپڑوں کی سلوٹیں نکالیں

کراچی: ہم سب جانتے ہیں کہ عصر حاضر میں کپڑوں سے سلوٹیں نکالنے کے لیے کپڑوں پر استری کی ضرورت ہوتی ہے جس کے لیے بجلی کا موجود رہنا بے حد ضروری ہے۔

اگر دونوں میں سے کوئی ایک چیز بھی وقت پر میسر نہ ہوتو ایسی صورتحال میں اکثر گھر میں ہونے والی تقاریب خراب ہوجاتی ہیں، اکثر اوقات عین وقت پر مطلوبہ کپڑے استری نہ ہونے کے سبب گھر کے کسی ایک فرد کا موڈ خراب بھی ہوجاتا ہے جس کے باعث اکثر پورے اہل خانہ کو کسی بھی تقریب میں جانے کا ارادہ ملتوی کرنا پڑتا ہے۔

عصر حاضر میں ترقی ہونے کے سبب بجلی اور استری کی سہولت تو موجود ہے مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ جب یہ سہولیات نہیں تھیں تو کپڑوں پر استری کیسے کی جاتی تھی؟ اب آپ کو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہم  آپ کو چند وہ مفید طریقے بتا رہے ہیں جو پرانے لوگ یعنی (بڑے، بوڑھے) استعمال کرتے تھے۔

دھاتی برتن کا استعمال

1

کپڑوں کی سلوٹیں دور کرنے کے لیے کسی بھی دھاتی (چاندی، پیتل) یا دیگر دھاتوں کے برتن کو استعمال کیا جاسکتاہے، جس برتن کا پیندا سیدھا ہو اس میں پانی ڈال کر ہلکی آنچ پر چولے پر رکھ کر ابال لیں پھر برتن کو کپڑے پر پھیریں۔

اس طرح کرنے سے کپڑے میں موجود سلوٹیں دور ہوجائیں گی اور وہ استری کے متبادل کا کام سرانجام دے گا، پانی کی جتنی زیادہ مقدار ہوگی برتن اتنی دیر تک استری کا متبادل ہوگا۔ ہلکی آنچ پر پانی گرم کرنے سے برتن کا پیندا کالا نہیں ہوگا۔

گیلے تولیے کا استعمال

21

شکنوں والے کپڑے پر تولیے کو گیلا کر کے پھیرے جس سے کافی حد تک شکنیں دو ہوجائیں گی ، بعد ازاں گیلے کپڑوں خشک ہونے تک رسی پر لٹکا دیں اور پھر اسے زیب تن کریں، ایسا کرنے سے کپڑے استری کیے ہوئے معلوم ہوں گے۔

ہیر ڈرائیر کا استعمال

3

اگر آپ کے گھر میں موجود استری خراب ہے یا پھر بجلی نہ ہونے کی وجہ آپ کے کپڑے استری ہونےسے رہ گئے ہیں تو ہیر ڈارئیر کی مدد سے آپ کپڑوں میں موجود سلوٹوں کو دور کرسکتے ہیں۔

اس کا آسان طریقہ یہ ہے کہ مشین کو کپڑوں سے 3 انچ اوپر رکھ کر شکنوں والی جگہ پر ہوا دیں ایسا کرنے سے دیکھتے ہی دیکھتے سلوٹیں ختم ہوجائیں گی اور کپڑے پہننے کے قابل ہوں گے۔

گیلے بدن میں کپڑے پہننے

غسل کرنے کے بعد اپنے جسم کو خشک کرنے سے قبل کپڑے پہن لیں اور ہاتھ گیلے کر کے سلوٹوں والی جگہ پر دو تین بار پھیریں ایسا کرنے سے کپڑے کی سلوٹیں دور ہوجائیں گی خشک ہوتے ہی یہ استری کیے ہوئے معلوم ہوں گے۔

ان تمام آزمودہ طریقوں سے  فائدہ اٹھائیں اور لوڈشیڈنگ یا استری کی خرابی کی صورت میں پریشانی سے بچ جائیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top