The news is by your side.

Advertisement

ہیٹ ویو سے بچاؤ کے طریقے

دنیا بھر میں اس وقت ماحولیاتی تبدیلیوں کا عمل جاری ہے۔ پوری دنیا کو اس وقت جس سب سے بڑے چیلنج کا سامنا ہے وہ ہے عالمی حدت میں اضافہ یعنی گلوبل وارمنگ۔

ماہرین کے مطابق پچھلے 10 سے 15 سال میں جس قدر موسمیاتی تبدیلیاں ہوئی ہیں، اتنی پچھلے 200 سالوں میں نہیں ہوئیں۔ اس کی وجہ تیزی سے ہوتی صنعتی ترقی ہے۔ پچھلے ایک عشرے میں بے شمار صنعتوں کا قیام عمل میں لایا گیا۔ کئی ممالک میں صنعتی زونز بناد یے گئے۔ ترقی پذیر ممالک میں تو شہر کے بیچوں بیچ اور رہائشی علاقوں میں بھی صنعتیں قائم ہوگئیں یوں دنیا کا موسم تیزی سے تبدیل ہونے لگا۔

مزید پڑھیں: کلائمٹ چینج اور پانی کی قلت سے مختلف ممالک کی جی ڈی پی میں کمی

اس موسمیاتی تبدیلی سے سب سے بڑا نقصان تو یہ ہوا کہ پوری دنیا کی حدت میں اضافہ ہوگیا۔ مختلف ممالک میں پہلے کے مقابلے میں زیادہ گرمی پڑنے لگی۔ گرمی کی وجہ سے گلیشیئرز بھی پگھلنے لگے یوں سطح سمندر میں اضافے کے باعث سیلابوں کا خطرہ بھی بڑھ گیا۔ ماہرین کے مطابق دنیا کے کئی ساحلی شہر 2050 تک صفحہ ہستی سے مٹ جائیں گے۔

مزید پڑھیں: کلائمٹ چینج سے خواتین سب سے زیادہ متاثر

موسم کی تبدیلی سے فصلوں کی افزائش پر بھی اثر پڑا۔ علاوہ ازیں قحط اور پانی کی کمی جیسے مسائل نے بھی کئی علاقوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔

بھارت میں بھی شدید گرمی کے باعث اب تک نہ صرف 200 افراد ہلاک ہوچکے ہیں بلکہ جنگلوں اور جھونپڑیوں میں آگ لگنے کے واقعات اور کئی ریاستوں میں پانی کی شدید کمی کے مسائل کا سامنا ہے۔

مزید پڑھیں: بھارتی ریاست بہار میں کھانا پکانے پر پابندی عائد

کراچی بھی اس وقت تاریخ کے گرم ترین موسم کی لپیٹ میں ہے۔ پچھلے سال کراچی میں ہیٹ ویو آئی جس میں پارہ 42 ڈگری سینٹی گریڈ تک جا پہنچا اور اس جان لیوا گرمی نے 1700 افراد کی جان لے لی۔ اس سال بھی گرمی کے موسم میں کئی بار ہیٹ ویو کی پیشن گوئی ہے جس کے لیے تیاریاں کی جاچکی ہیں اور شہریوں کو احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایت کی جارہی ہے۔

مزید پڑھیں: کراچی ہیٹ ویو، اسے ہوّا مت بنائیں

یہاں ہم آپ کو کچھ ایسی ہی تدابیر بتا رہے ہیں جنہیں اپنا کر آپ ہیٹ ویو کے دنوں میں خطرات سے محفوظ رہ سکتے ہیں۔

:زیادہ سے زیادہ پانی پئیں

hw-1

پانی آپ کے جسم کے درجہ حرارت کو معمول پر رکھتا ہے چنانچہ گرمی کے دنوں میں زیادہ سے زیادہ پانی پئیں۔

:بچوں کو بند کار میں نہ چھوڑیں

hw-2

دن کے اوقات میں اگر باہر جانا ہو تو بند گاڑی میں کبھی بھی بچوں یا جانوروں کو نہ چھوڑیں۔ یہ عمل ان کے لیے جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے۔

:اپنا شیڈول ترتیب دیں

hw-3

شدید گرمی کے دنوں میں باہر نکلنے سے زیادہ سے زیادہ پرہیز کریں۔ کوشش کریں کہ باہر نکلنے والے کام صبح سورج نکلنے سے پہلے یا شام کے وقت نمٹالیں۔

:باہر نکلتے ہوئے احتیاطی تدابیر اختیار کریں

hw-4

گھر سے باہر نکلتے ہوئے سن اسکرین، دھوپ کے چشمے اور کیپ کا استعمال کیجیئے۔ سورج کی براہ راست تپش سے جتنا زیادہ محفوظ رہیں اتنا ہی بہتر ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں