The news is by your side.

ممنوعہ فنڈنگ کیس: اکبر ایس بابر نے پی ٹی آئی کی اپیل میں فریق بننے کا فیصلہ

اسلام آباد: ممنوعہ فنڈنگ کیس میں اکبر ایس بابر نے پی ٹی آئی کی اپیل میں فریق بننے کی درخواست دائر کردی۔

تفصیلات کے مطابق ممنوعہ فنڈنگ کیس میں اکبر ایس بابر نے پی ٹی آئی کی اپیل میں فریق بننے کا فیصلہ کرلیا۔

اکبر ایس بابر نے فریق بننے کے لئے اسلام آبادہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کا لارجر بنچ پی ٹی آئی کی اپیل پر کل سماعت کرے گا ، قائم مقام چیف جسٹس عامرفاروق، جسٹس میاں گل حسن اور جسٹس بابر ستار سماعت کریں گے۔

اس موقع پر اکبر ایس بابر نے ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لارجر بنچ تشکیل دینے کا فیصلہ خوش آئند ہے خیر مقدم کرتے ہیں ، یہ کیس پاکستان کی سیاست کو تبدیل کر دے گا اور شوکاز کے نتیجے میں آنے والے دنوں میں جو فیصلے آئیں گے قوم کی آنکھیں کھل جائیں گی۔

اکبر ایس بابر کا کہنا تھا کہ ممنوعہ فنڈنگ کیس میں لارجر بینچ تشکیل دیا گیا ہے اس میں فریق نہیں بنایا گیا ، ہم سمجھتے ہیں جہاں الیکشن کمیشن کے فیصلے کو چیلنج کیا ہے اس میں ہمیں فریق بنیں۔

انھوں نے کہا کہ بارہا کوشش کی گئی کہ ہمیں نکالا جائے ، غیر قانونی فنڈ ریزنگ کو غیر قانونی قرار دیا گیا ہے، میں کہتا آیا ہے ہوں یہ پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا فنڈنگ اسکینڈل ہے اور اس اسکینڈل میں پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شریک ہیں۔

اکبر ایس بابر کا مزید کہنا تھا کہ فنانشل ٹائمز کی خبر نے ثابت کیا ابراج سے ڈالرز آئے، عمران خان آپ نے سچائی سامنے آنے سے روکنے کیلیے کئی پٹیشن دائر کیں، فنانشل ٹائمز کی اسٹوری آپ کے دعووں کو تباہ کرتی ہے کہ کچھ نہیں چھپایا۔

انھوں نے عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا آپ فنانشل ٹائمز کیخلاف دعوی کیوں دائر نہیں کرتے ، آپ کو تو اُس ملک کی عدالتوں پر بڑا اعتبار ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں