ہمیشہ کرپشن کے ریکارڈ کو ہی کیوں آگ لگتی ہے؟ واقعے کی حقیقت جلد سامنے ہوگی، عثمان ڈار -
The news is by your side.

Advertisement

ہمیشہ کرپشن کے ریکارڈ کو ہی کیوں آگ لگتی ہے؟ واقعے کی حقیقت جلد سامنے ہوگی، عثمان ڈار

اسلام آباد : تحریک انصاف کے رہنما عثمان ڈار نے کہا ہے کہ کرپشن کا کوئی کیس منطقی انجام کو پہنچتا ہے تو ریکارڈ کو آگ لگ جاتی ہے، ہمیشہ کرپشن کے ریکارڈ کو ہی کیوں آگ لگتی ہے؟ ہماری کوشش ہوگی کہ آگ کی تحقیقات جلد سامنے آجائے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اے آر وائی کے پروگرام سوال یہ ہے میں گفتگو کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر وزیراطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان بھی موجود تھے۔

عثمان ڈار نے کہا کہ نندی پور منصوبے میں اربوں روپے کی تاریخ ساز کرپشن کی گئی اس کا ریکارڈ بھی جل گیا۔ ایم ایم عالم روڈ پر پلازہ میں آتشزدگی پنجاب حکومت کیلئے ٹیسٹ کیس اور لمحہ فکریہ ہے، حکومت کی پوری کوشش ہوگی آگ لگنے کی تحقیقات جلد سامنے آجائے۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن دھاندلی دھاندلی کا شور کررہی ہے اب تک کوئی حلقہ نہیں بتایا، دھاندلی پر پارلیمانی کمیشن نہ بننے کی ذمہ دارخود اپوزیشن ہے، اپوزیشن یہ تو بتائے کہ کس حلقے سے تحقیقات شروع کرنی ہیں۔

عثمان ڈار نے کہا کہ انتخابات میں مبینہ دھاندلی پرکمیشن بنایا جائے گا، پی ٹی آئی حکومت ہی الیکشن کمیشن کو بھی ٹھیک کرے گی، کوشش ہوگی کہ آئندہ عام انتخابات بائیو میٹرک سسٹم کے تحت ہوں۔

اس موقع پر فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ پلازہ کی چھٹی منزل پر صاف پانی کمپنی کا دفتر تھا، شہبازشریف کے داماد علی عمران سے یہ دفتر30لاکھ روپے ماہانہ پرلیا، شاپنگ پلازہ میں دفاتر بنانا غیرقانونی ہے، ریکارڈ جلانے کی پرانی روایات کے تحت کچھ گڑبڑ لگ رہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں