The news is by your side.

Advertisement

پنجاب اسمبلی کے باہردھرنا 4 گھنٹے کے اندر ختم کروالیں گے، رانا ثناء اللہ

لاہور : صوبائی وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ اسمبلی کے باہر موجود دھرنا مظاہرین کے قائدین سے حکومت رابطے میں ہے اور 4 گھنٹوں کے درمیان معاملات طے پاجائیں گے.

ان خیالات کا اظہارانہوں نے پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا نمائندگان سے بات چیت کرتے ہوئے کیا، رانا ثناء اللہ نے کہا کہ پنجاب حکومت کی جانب سے زعیم قادری سیال شریف کی روحانی شخصیت حمید الدین سیالوی کو اہم پیغام پہنچایا ہے جس کے بعد معاملات خوش اسلوبی سے طے پانے کی قومی امید ہے.

صوبائی وزیر قانون نے دعوی کیا کہ دھرنا دینے والوں کو4 گھنٹے میں مطمئن کردیں گے جس کے بعد دھرنا کے شرکاء منتشرہوجائیں گے اور شاہراہ معمول کے مطابق کھول دی جائے گی.

انہوں نے مزید کہا کہ مسلم لیگ (ن) نے کسی بھی مسئلے کو زاتی انا کا مسئلہ نہیں بنایا ہے بلکہ ملکی مفاد میں وفاقی وزیر تک نے اپنے عہدوں کو چھوڑ کر پاکستان کی سیاسی تاریخ میں ایک نئی مثال رقم کی ہے جس کی نظیر اس قبل نہیں ملتی تھی.

یاد رہے فیض آباد دھرنے کے قائدین اور حکومت کی جانب سے کیے گئے معاہدے کے تحت وفاقی وزیر قانون مستعفیٰ ہو چکے ہیں جب کہ اسیک ماہ کے اندر راجہ ظفرالحق کمیٹی کی رپورٹ بھی شائع کردی جائے گی.

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں