The news is by your side.

Advertisement

روالپنڈی، ماں ممتا کے ہاتھوں مجبور، ناخلف بیٹے اور بہو کو معاف کردیا

راولپنڈی: بیٹے اور بہو کے ہاتھوں بہیمانہ تشدد کا نشانہ بننے والی ماں نے اپنے بچے اور اُس کی اہلیہ کو معاف کردیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق چند روز قبل روالپنڈی کے علاقے تھانہ صادق آباد کی حدود میں ارسلان نامی شخص نے اپنی اہلیہ کے ساتھ مل کر ماں گلنار بی بی کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔

سفاک بیٹے کی ماں پر تشدد کی ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل ہوئی تھی جس کے بعد سوشل میڈیا صارفین نے شدید احتجاج کیا اور پھر  متعلقہ حکام نے واقعے کا نوٹس لے کر ملزم کو فوری طور پر گرفتار کرنے کیا۔

متاثرہ خاتون نے ارسلان اور اُس کی اہلیہ کے خلاف تھانہ صادق آباد میں مقدمہ درج کرایا تھا جس کے بعد ملزم اور اُس کی بیوی نے عدالت سے ضمانت قبل از گرفتاری حاصل کرلی تھی۔

مزید پڑھیں: بوڑھی ماں پر تشدد کرنے والے ناخلف بیٹے کا اعترافِ جرم

عدالت نے ملزم اور اُس کی اہلیہ کو ہدایت کی تھی کہ وہ تفتیش کے دوران پولیس کے ساتھ تعاون کریں۔

راولپنڈی پولیس نے ملزم کی ایک ویڈیو سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر شیئر کی تھی جس میں ارسلان اپنے ناقابلِ برداشت فعل پر شرمندگی کا اظہار کر کے دنیا بھر کی ماؤں سے معافی بھی مانگ رہا تھا۔

ارسلان اور اُس کی اہلیہ نے گلنار بی بی سے معافی مانگی جس پر تشدد کا نشانہ بننے والی خاتون کی ممتا جاگی اور انہوں نے اپنے بیٹے، بہو کو معاف کردیا۔ گلنار بی بی کا اپنے پیغام میں کہنا تھا کہ ’میں نے بیانِ حلفی جمع کرادیا ہے اور بچوں کے خلاف کوئی قانونی کارروائی نہیں چاہتی‘۔

یہ بھی پڑھیں: سنگدل بیٹے کے ہاتھوں تشدد کا نشانہ بننے والی مظلوم ماں کا بیان سامنے آگیا

خاتون کا کہنا تھا کہ ’ بچوں سے غلطی ہوئی جس کا انہیں احساس ہوگیا اور انہوں نے اس کا اعتراف بھی کیا، میں نے ارسلان اور اُس کی بیوی کو دل سے معاف کردیا، اللہ میرے بیٹے کو ہدایت دے‘۔

Comments

یہ بھی پڑھیں