پیرس: فلمی انداز میں‌ جیل سے فرار ہونے والا مجرم دوبارہ گرفتار jailbreak-gangster-captured
The news is by your side.

Advertisement

پیرس: فلمی انداز میں‌ جیل سے فرار ہونے والا مجرم دوبارہ گرفتار

پیرس : فرانسیسی دارالحکومت سے ہیلی کاپٹر کے ذریعے فلمی انداز میں فرار ہونے والے خطرناک مجرم کو پولیس اہلکاروں نے پیرس کے شمالی علاقے سے دوبارہ حراست میں لے لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق فرنسیسی پولیس نے ملک میں دارالحکومت پیرس کی جیل سے ہیلی کاپٹر کے ذریعے فرار اختیار کرنے والے مجرم ریدوئن فائد کو آج صبح دوبارہ گرفتار کرلیا گیا ہے۔

ریدوئن فرئڈ کے دوبارہ گرفتار ہونے کا مقام

فرانسیسی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ 46 سالہ ریدوئن فائڈ ملک کے سب سے خطرناک مجرموں میں شمار ہوتا ہے جو اپنے بھائی اور دو افراد کی مدد سے جیل سے فرار ہوا تھا۔

حکام کا کہنا ہے کہ فائد ہالی ووڈ فلموں کا بے حد شوقین ہے اور امریکی ڈائریکٹر مائیکل مین کی کرائم فلموں کا دیوانہ ہے۔

ان کے مطابق ایک بار پیرس فلم فیسٹیول کے دوران وہ مائیکل مین سے ملا اور اس سے کہا، ’تم میرے تکنیکی مشیر ہو‘۔ اس نے کئی جرائم میں مائیکل کی فلموں میں دکھائی جانے والی مجرمانہ تکنیکیں بھی استعمال کیں۔

برطانوی میڈیا کا کہنا ہے کہ مجرم ریدوئن فائد کو پہلی مرتبہ سنہ 1998 میں مسلح ڈکیتی کرنے کے جرم میں گرفتار کیا گیا تھا تاہم سنہ 2009 میں ضمانت پر رہا کردیا گیا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ مجرم کو سنہ 2010 میں خاتون پولیس افسر کو دوران ڈکیتی قتل کرنے کے جرم میں 25 قید کی سزا ہوئی تھی تاہم وہ رواں برس 1 جولائی کو فلموں کا شوقین گینگسٹر نے فلمی انداز میں ہی جیل سے فرار ہوگیا تھا۔

فرانسیسی پولیس کا کہنا تھا کہ فائد کے ساتھی ایک جگہ سے ہیلی کاپٹر کے پائلٹ کو یرغمال بنا کر اسے ہیلی کاپٹر سمیت جیل کے اندر لے آئے تھے۔

پولیس کا کہنا تھا کہ مجرم کا ایک ساتھی جیل کے احاطے میں ہیلی کاپٹر کی حفاظت کرتا رہا جبکہ 2 ساتھی اندر داخل ہوئے اور دھوئیں کے بم چلائے اور کمرہ ملاقات کے دروازے توڑ کر فائد کو ہیلی کاپٹر میں بٹھا کر فرار ہوگئے۔


مزید پڑھیں : فلموں کا شوقین مجرم فلمی انداز میں جیل سے فرار


فرانسیسی پولیس کا کہنا ہے کہ فائد اس سے قبل بھی ایسی ہی ایک خطرناک تکنیک سے جیل سے فرار ہوچکا ہے۔ سنہ 2013 میں اس نے جیل کے گارڈز کو ڈھال بنا کر ڈائنامائٹ سے ذریعے جیل کے دروازوں کو توڑا اور فرار ہوگیا۔

فرانسیسی حکومت نے 2013 میں جیل سے فرار ہونے کے بعد ریدوئن فرئڈ کا نام اشتہائی مجرموں کی فہرست میں شامل کردیا تھا

فرار کی یہ کامیاب کوشش اس نے جیل پہنچنے کے صرف ایک گھنٹے کے اندر کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں