فرانسیسی صدر کے قتل کا منصوبہ بنانے والے 6 ملزمان گرفتار emmanuel macron
The news is by your side.

Advertisement

فرانسیسی صدر کے قتل کا منصوبہ بنانے والے 6 ملزمان گرفتار

پیرس: فرانسیسی صدر ایمانویل میکرون کے قتل کا منصوبہ بنانے والے چھ ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔

فرانسیسی انٹیلی جنس ایجنسی ڈی جی ایس آئی کے مطابق خاتون سمیت 6 ملزمان کو تین مختلف علاقوں میں کارروائی کرکے گرفتار کیا گیا، گرفتار ملزمان کی عمریں 22 سے 62 سال کے درمیان بتائی جاتی ہیں۔

وزارت داخلہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ گرفتار تمام افراد کا تعلق دائیں بازو کی جماعت سے ہے، جن کے خلاف تفتیش جاری ہے، تفتیش کے باعث ملزمان کے نام ظاہر نہیں کیے گئے۔

ملزمان کی گرفتاری ایسے موقع پر کی گئی کہ جب چار روز قبل صدر میکرون نے ایک انٹرویو کے دوران دائیں بازو کی تحریک کو خطرہ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ لاپرواہی نے 20ویں صدی عیسوں کے آغاز پر جرمنی میں ہٹلر اور اٹلی میں میسولینسی کے لیے راہ ہموار کی۔

واضح رہے کہ جولائی 2017 کو بیسٹائل ڈے کی تقریب سے قبل صدر میکرون دہشت گردوں کی جانب سے قاتلانہ حملے کا نشانہ تھے جس کے جرم میں ایک شخص پر فرد جرم عائد کی گئی تھی۔

اکتوبر 2017 میں اینٹی ٹیرر ازم پولیس نے مسجد پر حملوں، تارکین وطن کو نشانہ بنانے سمیت سیاست دانوں پر حملے کرنے کے الزام میں 10 افراد کو گرفتار کیا تھا۔

رواں سال 10 جون کو دائیں بازو کے گروپ آپریشنل فورسز ایکشن کے 10 ممبران پر مسلمانوں پر حملے کی منصوبہ بندی کے الزام پر فرد جرم عائد کی گئی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں