عجیب الخلقت سر والے بچے کا 2 ہزار سالہ قدیم ڈھانچہ دریافت -
The news is by your side.

Advertisement

عجیب الخلقت سر والے بچے کا 2 ہزار سالہ قدیم ڈھانچہ دریافت

روس کے شہر کریمیا میں ماہرین آثار قدیمہ نے 2 ہزار سالہ قدیم ایک ڈھانچہ دریافت کیا ہے جو ایک چھوٹے بچے کا ہے اور اس کا سر غیر معمولی ہیئت کا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ بچہ ممکنہ طور پر جنگجو قبیلے سے تعلق رکھتا ہے جسے مستقبل میں جنگوں میں لڑنے کی تربیت دی جانی ہو۔

اس ڈھانچے کا سر غیر معمولی طور پر لمبا ہے اور بعد ازاں ماہرین نے بتایا کہ یہ سرمتی قبیلے سے تعلق رکھتا ہے جو پہلی صدی قبل مسیح کے جنگجوؤں کا نامور قبیلہ ہے۔

اس قبیلے کی ایک جسمانی خصوصیت ان کے لمبوترے سر تھے۔ یہ لوگ بچوں کے پیدا ہونے کے بعد ان کے سر پر ایک نرم کپڑا اور لکڑی کا ایک لمبوترا فریم پہنا دیا کرتے تھے جس کے بعد ان بچوں کا سر اسی شکل میں نمو پاتا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اس قبیلے میں اس نوعیت کے سر خوبصورتی کی علامت سمجھے جاتے تھے۔

کریمیا میں اس بچے کی قبر ایک زیر تعمیر پل کے نزدیک دریافت ہوئی۔ ماہرین آثار قدیمہ کے مطابق اس بچے کی عمر 2 سال ہے۔ انہوں نے اسے خلائی مخلوق کی قبر کا نام بھی دیا۔

قبر کی دریافت کے بعد ایک روسی خبر رساں ادارے نے رپورٹ کیا کہ قدیم دور کے بعض خلا باز ایسے لمبوتروں سروں کو خلائی مخلوق سے جوڑتے ہیں اور ان کے مطابق یہ خلائی مخلوق کی زمین پر پرورش پانے والی نسل ہے۔

تاہم آرکیالوجی انسٹیٹیوٹ آف رشین اکیڈمی آف سائنس کے ایک پروفیسر نے اس بات کی نفی کی کہ ان کا تعلق خلائی مخلوق سے ہے۔

ان کے مطابق لمبوترے سر سرمتی ثقافت کی اہم خصوصیت ہیں جو اس دور میں خوبصورتی کی علامت سمجھے جاتے تھے۔

ماہرین کو امید ہے کہ اس ڈھانچے کی دریافت سے انہیں اس دور کے بارے میں اہم معلومات جاننے میں مدد مل سکتی ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں