The news is by your side.

Advertisement

قرنطینہ میں کیا کام کیے جاسکتے ہیں؟ مایا علی نے بتادیا

لاہور: پاکستانی کی معروف اداکارہ مایا علی نے کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے خود کو گھروں میں محدود کرنے والے مداحوں کو 20 زبردست کام بتا دیے جن پر عمل کر کے وقت کو اچھے طریقے سے گزارا جاسکتا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر مایا علی نے ایک پوسٹ شیئر کی جس پر لکھا تھا کہ وہ کون سے کام ہیں جو ہم قرنطینہ میں کرسکتے ہیں؟۔

’سب سے پہلےنماز، قرآن کی تلاوت، پودے لگانا / باغبانی کرنا، کتابوں کا مطالعہ، فلمیں ، حوصلہ افزا ویڈیوز، ڈرامے، دستاویزی فلمیں دیکھنا، پینٹنگ یا کیلی گرافی کرنا، اپنی الماری ٹھیک کرنا، روز مرہ کے معمولات لکھنا اور شیڈول بنانا، کھانے پکانا، ورزش کرنا، پرانے دوستوں سے رابطے کرنا، مختلف انڈور گیمز کھیلنا، گھر کی صفائی کرنا، سلائی، کڑائی سیکھنا، اُن چیزوں کے ٹوٹوریل دیکھ کر مشق کرنا جنہیں سیکھنا چاہتے ہیں، چمک دار کپڑے پہننا، اہل خانہ سے گفتگو کرنا، انہیں کہانی سنانا، اپنی بیگمات کا سہارا بن کر گھر کی صفائی اور کھانا پکانا، مثبت سوچ رکھنا اور ذہنی دباؤ نہ لینا۔‘

مزید پڑھیں: کرونا ٹیسٹ کی رپورٹ کلیئر آنے کے بعد مایا علی احتیاطی تدابیر پر عمل پیرا

پوسٹ کے آخر میں سب سے اہم نقطہ تحریر ہے جس میں بتایا گیا کہ ’اپنے گھر میں کام کرنے والے ملازمین اور مددگاروں کو نظر انداز نہ کریں کیونکہ وہ بھی آپ کی طرح اس مشکل صورت حال کا سامنا کررہے ہیں، آئیں اس مشکل وقت میں ایک فیملی بنیں‘۔

View this post on Instagram

Stay calm, relax and make yourself more productive in these quarantine days. 🌸🌸

A post shared by Maya Ali (@official_mayaali) on

مایا علی نے لکھا کہ پرسکون رہیں ، آرام کریں اور خود کو ان فراغت کے دنوں میں زیادہ منفرد بنائیں۔

قبل ازیں انہوں نے ایک پوسٹ شیئر کی جس میں اداکارہ نے لکھا کہ ’بعض اوقات ہم آسمان کی طرف دیکھتے ہیں تو اُس لمحے بہت کچھ سوچتے ہیں، کبھی مثبت تو کبھی منفی خیالات بھی ذہن میں آتے ہیں‘۔

یہ بھی پڑھیں: مایا علی کا بھائی کی شادی پر اپنے مرحوم والد کو دلخراش خط

مایا علی نے لکھا کہ ’ہمارے اندر ایک امید بھی ہوتی ہے جو ہمیں مضبوط رہنے اور مثبت رکھنے کی ترغیب دیتی ہے‘۔

اداکارہ نے لکھا کہ ’مجھے یقین ہے کہ انشاء اللہ یہ وقت (کرونا) بھی گزر جائے گا، ہم ایک بار پھر سے مسکرائیں گے، ایک دوسرے سے ہاتھ ملائیں گے ، گلے ملیں گے اور اپنے پیاروں کے ساتھ اجتماعات کریں گے مگر اُس وقت تک گھر میں رہیں اور محفوظ رہیں‘۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں