پیوٹن اگر قاتل ہیں تو امریکا بھی معصوم نہیں، ٹرمپ -
The news is by your side.

Advertisement

پیوٹن اگر قاتل ہیں تو امریکا بھی معصوم نہیں، ٹرمپ

واشنگٹن : امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے روس کے صدرپیوٹن کی تعریف کرتے ہوئے اعتراف کیا کہ پیوٹن اگر قاتل ہیں تو امریکا بھی معصوم نہیں۔

امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ کو متنازع بیانات اور فیصلوں پر ایک بار پھر تنقید کے طوفان کا سامنا ہے، امریکی ٹی وی کو انٹرویو میں امریکی صدر ٹرمپ نے کہا کہ روس کے صدرولادی میرپیوٹن کا احترام کرتا ہوں مگر اس کا یہ مطلب نہیں میں ان کا ساتھ دے رہا ہوں، وہ اپنے ملک کے رہنما ہیں مگر میرا ماننا ہے کہ روس سے تعاون نہ کرنے سے بہتر ہے کہ اس سے تعاون کیا جائے۔

putin1

امریکی صدر نے کہا کہ اگر روس داعش کیخلاف لڑائی میں ہماری مدد کرتا ہے تو روس کے ساتھ چلنا بہتر ہے۔ یہ ایک بڑی لڑائی ہے، کیا میں پیوٹن کے ساتھ چلوں گا؟ اس بارے میں ابھی کچھ نہیں کہا جا سکتا۔

انٹریوو کے دوران صحافی نے سوال کیا کہ ‘پوتین ایک قاتل ہے’ تو ٹرمپ نے جواب دیا کہ بہت سے لوگ قاتل ہیں، ہمارے پاس بھی بہت سے قاتل ہیں، آپ کیا سمجھتے ہیں کہ ہمارا ملک امریکہ بے گناہ اور معصوم ہے۔


مزید پڑھیں : پیوٹن بہت ہوشیار ہیں،ڈونلڈ ٹرمپ


دوسری جانب کی اپنی ری پبلکن پارٹی کے ارکان نے بھی ٹرمپ کو روسی صدر پیوٹن کی حمایت پر آڑے ہاتھوں لیا۔

اس سے قبل سات ملکوں کے شہریوں کو امریکا میں داخل ہونے پر پابندی عائد کیے جانے کے خلاف عدالتی فیصلہ پر ٹرمپ نے جج اور عدالتی نظام کو تنقید کا نشانہ بنایا، ٹرمپ کا کہنا تھا کہ کچھ ہوا تو ذمہ دار جج اور عدالتی نظام ہوگا۔

خیال رہے کہ امریکی عدالت نے ٹرمپ انتظامیہ کی سات اسلامی ملکوں پر عائد سفری پابندیاں بحال کرنے کی اپیل مسترد کر دی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں