The news is by your side.

Advertisement

دو فرانسیسی نوجوانوں کو داعش میں شمولیت کےالزام میں15 برس قید کی سزا

پیرس : فرانس کی  عدالت عالیہ نے اپنے دو شہریوں کو دولت اسلامیہ میں شامل ہو کر انسانی حقوق کی پامالی کے جرم میں 15 برس قید کی سزا سنا دی۔

تفصیلات کے مطابق فرانس کے دارالحکومت پیرس کی فوجی عدالت نے 2013 میں شام جا کر دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ میں شامل ہونے اور مسلح جدوجہد پر دو فرانسیسی شہریوں کو سزا سنائی ہے۔ دونوں نوجوانوں کو جیل منتقل کر دیا گیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق فرانس کی سپریم کورٹ نے فوجداری دفعات کے تحت 23 سالہ منیر دیوارہ اور 22 سالہ روڈریگ کنرم کو یہ سزا سنائی۔ دونوں پرشام جا کر جبہتہ النصرہ اور دولت اسلامیہ کی مسلح کارروائیوں میں حصہ لینے کا الزام تھا۔


پیرس: دہشتگردی کاخدشہ،97ہزارسیکیورٹی اہلکار اہم مقامات پرتعینات


فرانسیسی سپریم کورٹ نے مؤقف اختیار کیا کہ دونوں نوجوانوں نے عالمی دہشت گرد تنظیموں کی بے گناہ انسانوں کے خلاف مسلح کارروایئوں میں حصہ لیا، جو ایک سنگین جرم ہے۔

یاد رہے کہ کچھ عرصے قبل روڈریگ کنوم کی ایک تصویر انٹرنیٹ پر وائرل ہوئی تھی، جس میں ملزم ایک کٹے ہوئے سر کے ساتھ دکھائی دے رہا تھا۔ عدالتی کاررائی میں بھی یہ خبر زیر بحث آئی۔

واضح رہے کہ اس قبل بھی فرانس اور دیگر یورپی ممالک سے تعلق رکھنے والےنوجوانوں کو شام جاکر دولت اسلامیہ میں شمولیت اختیار کرکے مسلح کارروائیوں میں حصّہ لینے کے جرم میں قید کی سزائیں سنائی جاچکی ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں