The news is by your side.

امریکی صدر بائیڈن کی روس کو وارننگ

واشنگٹن: امریکی صدر جو بائیڈن نے روس کو وارننگ دی ہے کہ وہ یوکرین میں ایٹمی ہتھیار استعمال کرنے سے گریز کرے۔

تفصیلات کے مطابق روس اور یوکرین کے درمیان تنازع کے حوالے سے امریکی صدر بائیڈن کی روس کو ایک اور وارننگ سامنے آئی ہے، انھوں نے ایک انٹرویو میں روسی صدر ولادیمیر پیوٹن کو جوہری ہتھیاروں کے استعمال سے خبردار کیا۔

اتوار کو امریکی ٹی وی کے ایک پروگرام ’’60 منٹس‘‘ میں میزبان کو انٹرویو دیتے ہوئے جو بائیڈن نے کہا روس یوکرین میں جوہری ہتھیاراستعمال نہ کرے، اس سے جنگ کا منظر ہی تبدیل ہو جائے گا، امریکی صدر نے کہا روس نے ایسا کیا تو امریکا کا جواب نتیجہ خیز ہوگا۔

واضح رہے کہ بائیڈن انتظامیہ نے یوکرین کی فوج کو روس کے خلاف مزاحمت کی رفتار برقرار رکھنے میں مدد کے لیے مزید 600 ملین ڈالر کی فوجی امداد کا اعلان کیا ہے۔

ٹی وی پروگرام کے میزبان اسکاٹ پیلی نے بائیڈن سے سوال کیا کہ جیسے جیسے یوکرین میدان جنگ میں کامیاب ہو رہا ہے، ولادیمیر پیوٹن شرمندہ ہو رہے ہیں اور ایک کونے میں دبتے جا رہے ہیں، ایسے میں اگر وہ کیمیائی یا ٹیکٹیکل جوہری ہتھیاروں کے استعمال پر غور کر رہے ہیں تو آپ انھیں کیا کہیں گے؟

روسی صدر پیوٹن قاتلانہ حملے میں بچ نکلے

امریکی صدر بائیڈن نے جواب دیا ’’ایسا مت کرنا، ایسا مت کرنا، ایسا مت کرنا، ایسا کر کے تم دوسری جنگ عظیم کے بعد جنگ کا چہرہ ہی بدل دو گے۔‘‘

میزبان نے پوچھا کہ اگر پیوٹن نے یہ لکیر پار کر دی تو اس کے کیا عواقب ہوں گے؟ بائیڈن نے کہا اگر آپ سمجھتے ہیں کہ میں آپ کو یہ بتا دوں گا کہ اس کے نتائج کیا ہوں گے، تو یقیناً ایسا نہیں ہے، میں نہیں بتاؤں گا، ہاں یہ نتیجہ خیز ہوں گے۔

بائیڈن نے روسیوں کے حوالے سے کہا کہ وہ دنیا میں پہلے سے کہیں زیادہ اچھوت بن جائیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں