The news is by your side.

Advertisement

کابل فائرنگ، فیئر اینڈ فری الیکشن کے سربراہ جاں بحق

کابل: افغانستان کے دارالحکومت میں فائرنگ اور بم دھماکوں کا سلسلہ نہ رک سکا، آج ہونے والی فائرنگ کے نتیجے میں فیئر اینڈ فری الیکشن کے سربراہ جاں بحق ہوگئے ہیں۔

افغان میڈیا رپورٹ کے مطابق فیئر اینڈ فری الیکشن کے سی ای او یوسف راشد کو نامعلوم مسلح افراد نے کابل شہر میں نشانہ بنایا۔

یوسف راشد کے بھائی نے عبدالباقی راشد نے بتایا کہ واقعہ مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے آٹھ بجے کابل کے علاقے ٹنی کوٹ میں اس وقت پیش آیا جب اویس راشد حسب معمول اپنے دفتر جارہے تھے کہ مسلح افراد نے ان کی گاڑی پر اندھا دھند فائرنگ کردی، جس کے نتیجے میں وہ اور ان کا ڈرائیور شدید زخمی ہوئے۔

واقعے کے بعد زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا گیا، لیکن یوسف راشد اسپتال پہنچنے سے قبل ہی دم توڑ گئے، کابل پولیس نے بھی ان کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کردی ہے۔

افغان میڈیا کے مطابق یوسف راشد کابل میں سول سوسائٹی کے مقبول ترین کارکن تھے، فوری طور پر طالبان سمیت کسی بھی گروہ نے اس حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

گذشتہ روز بھی افغانستان کے دارالحکومت کابل میں سڑک کنارے نصب بم دھماکا ہوا تھا جس کے نتیجے میں تین ڈاکٹرز سمیت پانچ افراد جاں بحق ہوئے، طبی ماہرین کی یہ ٹیم کرونا کی روک تھام کے حوالے سے سرگرم تھی۔

یہ بھی پڑھیں:  افغانستان دھماکا، انسداد کرونا ٹیم کے پانچ اراکین جاں بحق

رپورٹ کے مطابق جاں بحق ہونے والے ڈاکٹر پل چرکی جیل میں قیدیوں کا علاج کرتے تھے، وہ معمول کے مطابق ڈیوٹی پر جیل جارہے تھے کہ اسی دوران دھماکا ہوا۔

افغانستان کے وزارت صحت کی ترجمان معصومہ جعفری نے بتایا کہ ’دھماکے کے نتیجے میں تین ڈاکٹرز جاں بحق ہوئے جن میں دو خواتین بھی شامل تھیں علاوہ ازیں دو نرسنگ کے شعبے سے وابستہ تھے، طبی ماہرین کی یہ ٹیم جیل میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے حوالے سے کام کررہی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں