The news is by your side.

Advertisement

کابل پر قبضہ، افغان طالبان کا روس کو اہم پیغام

ماسکو: افغان دارالحکومت کابل کے طالبان کے قبضے کی خبروں نے عالمی دنیا میں ہلچل مچادی ہے، ایسے میں طالبان ترجمان نے بڑا بیان جاری کردیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق طالبان کے سیاسی دفتر کے ترجمان سہیل شاہین نے کہا کہ طالبان کابل میں روسی سفارت خانے کی حفاظت کی ضمانت دیتے ہیں، انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہمارے روس کے ساتھ اچھے تعلقات ہیں۔

ترجمان افغان طالبان نے کہا کہ عمومی طور پر ہماری پالیسی یہ ہے کہ روسی اور دیگر سفارت خانوں کے کام کرنے کے لیے محفوظ حالات کو یقینی بنایا جائے، طالبان کے مطابق کابل میں موجود روسی سفارت کاروں کو ہم سے کوئی خطرہ نہیں ہوگا۔

دوسری جانب مزار شریف اور بگرام ایئر بیس پر قبضہ کرنے کے بعد اب طالبان افغانستان کے دارالحکومت کابل میں داخل ہوچکے ہیں، افغان وزارت داخلہ نے بھی اس بات کی تصدیق کردی ہے کہ طالبان تمام اطراف سے کابل میں داخل ہو رہے ہیں۔

مزید پڑھیں: طالبان کابل میں داخل؛ عبداللہ عبداللہ نے مہلت مانگ لی

صدر اشرف غنی کے مستعفی ہونے اور ملک چھوڑنے کے بعد کابل میں افراتفری ‏پھیل گئی ہے لوگ ‏بینکوں سے پیسے نکلوانے کے لیے باہر نکل آئے ہیں اور سڑکوں پر شدید ٹریفک ‏جام ہے۔

افغان چیف ایگزیکٹو نے اشرف غنی کے ملک چھوڑنے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ اشرف غنی نےافغانستان چھوڑ ‏دیا ہے، ڈاکٹرعبداللہ عبداللہ نےاشرف غنی کیلئےسابق صدرکالفظ استعمال کیا۔

افغان وزیر دفاع نے بھی ردعمل میں کہا کہ اشرف غنی ہمیں قیدمیں چھوڑکربھاگ گئے۔

طالبان نے افغان حکام اور فوجیوں کیلئےعام معافی کا اعلان بھی کیا ہے اور یقین دہانی کروائی ہے ‏‏کہ کسی کیخلاف کوئی انتقامی کارروائی نہیں کی جائےگی۔

طالبان نے واضح کیا ہے کہ کابل میں اسپتالوں، ایمرجنسی سروسز کو نہیں روکا جائےگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں