The news is by your side.

Advertisement

کیا کوہ پیما علی سدپارہ کی لاش مل گئی؟

اسلام آباد: کے ٹو بیس کیمپ سے دو افراد کی لاشیں ملی ہیں جس سے متعلق کہا جارہا ہے کہ یہ کوہ پیما علی سدپارہ اور جان سنوری کی ہوسکتی ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ کے ٹو بیس کیمپ کے قریب سے دو افراد کی لاشیں ملی ہیں اور یہ علی سدپارہ اور آئس لینڈ کے جان سنوری کی ہوسکتی ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ دونوں لاشیں ایک دوسرے سے کافی فاصلے پر تھیں، لاشوں کی شناخت جاری ہے۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ مشابروم ٹریک اینڈٹوررزکمپنی انتظامیہ نے 2لاشیں ملنے کی تصدیق کردی۔

دوسری جانب وزیر اطلاعات گلگت بلتستان فتح اللہ خان کا کہنا ہے کہ صبح 9 بجے لاشوں کو دور سے دیکھا گیا ہے، آرمی کے ہیلی کاپٹر کے ذریعے لاشوں کو نیچے لایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ جو کپڑے علی سدپارہ نے پہنے تھے اس سے شناخت ہوئی، تین لاشیں ملی ہیں دو کی شناخت ہوئی ہے، کل تک تینوں لاشیں حکومت کی تحویل میں آجائیں گی۔

مزید پڑھیں: ’علی سدپارہ واپسی پر حادثے کا شکار ہوئے‘

خیال رہے کہ رواں سال فروری میں علی سدپارہ اپنے بیٹے ساجد سدپارہ سمیت 2 غیر ملکی کوۂ پیماؤں کے ساتھ دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے 2 سر کرنے کے لیے نکلے تھے، وہ اس چوٹی کو موسم سرما میں سر کرنے کا ریکارڈ بنانا چاہتے تھے۔

محمد علی سدپارہ بھی پاکستان کے لیے اس اعزاز کو حاصل کرنا چاہتے تھے لہٰذا وہ خراب موسم کے باوجود اپنے مشن پر کاربند رہے اور مہم جوئی کو جاری رکھا، بعد ازاں ان کا اور دیگر کوہ پیماؤں کا رابطہ منقطع ہوگیا۔

پاک فوج کی ریسکیو ٹیم کئی روز تک انہیں تلاش کرتی رہی لیکن ناکام رہی جس کے بعد ان کے بیٹے ساجد سدپارہ نے والد کی موت کا باضابطہ اعلان کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں