The news is by your side.

Advertisement

خلا میں دانت کیسے برش کیے جاتے ہیں؟

خلا میں وقت گزارنا ایک نہایت مختلف تجربہ ہوتا ہے۔ خلا میں زمین کی کشش ثقل موجود نہیں ہوتی جس کی وجہ سے وہاں چیزوں کو رکھنا نا ممکن ہوتا ہے اور ہر شے ہوا میں تیر رہی ہوتی ہے۔

آپ ایک لمحے کے لیے سوچیں کہ خلا میں جانے کے بعد آپ کو کن کن امور کو مختلف انداز سے انجام دینا ہوگا۔ وہاں چلنا پھرنا تو محال ہے ہی، لیکن کھانا پینا، رفع حاجت اور سینکڑوں معمولی کاموں کے لیے بھی مختلف تکنیکوں کی ضرورت ہوتی ہے۔

کینیڈا کی خلائی ایجنسی کے خلا میں موجود خلا باز کرس ہیڈ فیلڈ نے ہمیں اس صورتحال کا ذرا سا اندازہ کروانے کی کوشش کی ہے۔

مزید پڑھیں: خلا کو تسخیر کرنے والی باہمت خواتین

ایک ویڈیو میں کرس بتارہے ہیں کہ خلا میں موجود افراد کس طرح سے ہاتھ دھوتے اور دانتوں میں برش کرتے ہیں۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ جب وہ ہاتھ دھونے والے محلول کو اس کے بیگ میں سے نکالتے ہیں تو وہ ایک بلبلے کی صورت ہوا میں معلق ہوجاتا ہے۔ اسی بلبلے کو وہ اپنے ہاتھوں کی صفائی کے لیے استعمال کرتے ہیں۔

اسی طرح دانت برش کرنے کے لیے بھی وہ یہی طریقہ استعمال کرتے ہیں۔

یاد رہے کہ خلا میں وقت گزارنے کے بعد جب خلا باز واپس زمین پر آتے ہیں تو کئی طبی پیچیدگیوں کا شکار ہوتے ہیں۔

خلا میں کشش ثقل کی غیر موجودگی کا عادی ہونے کے بعد زمین پر واپسی کے بعد بھی خلا بازوں کو توازن برقرار رکھنے میں مشکل کا سامنا ہوتا ہے جبکہ ان کے وزن میں بھی کمی ہوجاتی ہے۔

علاوہ ازیں عارضی طور پر ان کے خون کے سرخ خلیات بننے میں کمی واقع ہوجاتی ہے (جو وقت گزرنے کے ساتھ معمول کے مطابق ہوجاتی ہے)، نظر کی کمزوری یا کسی چیز پر نظر مرکوز کرنے میں مشکل اور سونے میں بھی مشکل پیش آتی ہے۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں