جاتی امرا کے نوکروں، ڈرائیوروں کو کروڑوں روپے آرہے ہیں: عمران خان -
The news is by your side.

Advertisement

جاتی امرا کے نوکروں، ڈرائیوروں کو کروڑوں روپے آرہے ہیں: عمران خان

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ جاتی امرا کے نوکروں، ڈرائیوروں کے اکاؤنٹس میں کروڑوں روپے آرہے ہیں۔ یہ پیسہ شریف خاندان کو جارہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پاناما کے بعد انکشاف ہوا شریف خاندان کی 16 کمپنیاں تھیں۔ نواز شریف کی 16 کمپنیوں کو پیسہ جاتا تھا۔ 16 میں سے ایک کمپنی فلیگ شپ میں پیسہ جاتا اور پاکستان آتا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ حدیبیہ پیپر مل بھی پیسہ بنانے کے لیے ایک کمپنی بنائی گئی تھی۔ پیسہ پہلے فلیگ شپ کمپنی کو جاتا پھر وہاں سے واپس آتا تھا۔ ماضی میں حکومت ان کو ملی تو منی لانڈرنگ کا پورا نظام بنا لیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ مجھے کیوں نکالا کی آج دوسری قسط پیش کرنے لگا ہوں۔ شریف خاندان کی سعودی عرب میں ایک کمپنی ہل میٹل تھی۔ پاکستان سے پیسہ دبئی اور پھر وہاں سے آگے جاتا تھا۔ ہل میٹل نواز شریف کو 114 کروڑ اور 68 لاکھ روپے بھیج چکی تھی۔ نواز شریف تقریباً 80 کروڑ مریم نواز کے نام کر چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہل میٹل کے ذریعے مختلف لوگوں کے اکاؤنٹس میں پیسہ جا رہا ہے۔ ’پنجاب پولیس کا تو بیڑاغرق ہونا ہی تھا کیونکہ منی لانڈرنگ کروا رہے ہیں۔ نواز شریف کا ڈرائیور 18 کروڑ روپے آگے بھیجتے ہیں‘۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ پنجاب پولیس کے 3 کانسٹیبل اور نواز شریف کے ڈرائیور کو پیسے آ رہے ہیں۔ ’جاتی امرا کا نوکر محمد سلیم 5 کروڑ عاصم محمود کو بھیجتا ہے۔ نواز شریف کے ڈرائیور کے اکاؤنٹ میں پیسے آئے اور اس نے واپس بھیجے۔ عاصم محمود 24 کروڑ روپیہ نواز شریف کے ملازموں کو بھیجتا ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ یہ پیسہ ڈرائیور یا نوکروں کو نہیں، واپس ان کے پاس جا رہا ہے۔ اپنے ہی لوگوں کو پیسے بھیجنا منی لانڈرنگ کا ایک طریقہ ہے۔عمران خان کا کہنا تھا کہ یہ تمام تفصیلات نیب کو دینے والے ہیں۔

عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ آج خواجہ اقامہ آصف نے اسمبلی میں دھواں دھار تقریر کی۔ خواجہ آصف اور نواز شریف جیسے لوگوں نے اسمبلی تباہ کی ہے، اسمبلی کا تقدس خراب کیا۔ ’وزیر خارجہ دبئی میں ایک کمپنی کے لیے کام کر رہا ہے۔ دنیا کا کون سا وزیر خارجہ دبئی کی کمپنی میں کام کرتا ہے۔ خواجہ آصف کے اکاؤنٹ سے امریکا بیگم کے اکاؤنٹ میں پیسہ جا رہا ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ خواجہ آصف جیسا شخص ملک کے لیے سیکیورٹی رسک ہے۔

عمران خان نے کہا کہ میر شکیل الرحمٰن کا صحافت سے تعلق نہیں یہ بلیک میلر ہے۔ ’مطالبہ کرتے ہیں کہ میر شکیل اپنی ساری اسٹیٹ منٹس پبلک کریں۔ میر شکیل ملک سے سب سے بڑے مجرم کو بچانے کی کوشش کر رہا ہے‘۔

چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ نیب کی جانب سے شہباز شریف کو طلب کرنے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ ’چیئرمین نیب صاحب قوم آپ کے ساتھ ہے کسی قسم کا دباؤ نہ لیں‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ پارلیمنٹ میں چوروں کا مافیا بیٹھا ہے میں ان کی کیسے عزت کروں۔ ’لعنت والا لفظ میں نے بہت ہلکا استعمال کیا۔ ان کو شکر ادا کرنا چاہیئے کہ میں نے خود کو کنٹرول کیا ورنہ بہت سخت لفظ استعمال کرتا‘۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں