The news is by your side.

Advertisement

یوکرین، بھوک کی وجہ سے اپنی دوست کو قتل کر کے ٹانگیں کاٹ کر پکانے والا شخص گرفتار

کییو: یوکرین کی پولیس نے خاتون کو قتل کر کے اُس کی ٹانگیں کھانے والے درندہ صفت آدم خور شخص کو گرفتار کرلیا جس نے اپنے جرم کا اعتراف بھی کیا ہے۔

دی مرر  پر دو روز قبل شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق یوکرین کے شہر کروح رہ کے رہائشی اکتالیس سالہ الیگزینڈر نامی شخص نے اپنے ساتھ رہنے والی پچاس سالہ دوست کو اُس وقت قتل کیا جب وہ سو رہی تھیں۔

الیگزینڈر کے مطابق رات کے وقت اُسے شدید بھوک لگ رہی تھی اور گھر میں کھانے کے لیے کچھ نہیں تھا، اس لیے اُس نے خاتون کو قتل کیا اور پھر اُن کی ٹانگیں جسم سے علیحدہ کر کے پکا کر کھائیں۔

ملزم نے پولیس کو بیان دیا کہ اُس نے باورچی خانے سے چھری اٹھائی، پہلے خاتون کو ذبح کیا اور پھر جسم سے ٹانگیں علیحدہ کر کے اُس کا گوشت پکایا جبکہ باقی گوشت فریج میں محفوظ کرلیا۔

مزید پڑھیں: خاتون کا مغز چاولوں میں ڈال کر کھانے والا درندہ صفت قاتل گرفتار

الیگزینڈر کے مطابق کھانا کھانے کے بعد وہ خاتون کا دھڑ گھسیٹ کر گھر کے قریب میں واقع جنگل لے کر گیا اور وہاں لاش کو چھپا دیا تاکہ کسی کو شبہ نہ ہو۔

پولیس کے مطابق سیر کے لیے آنے والے سیاح نے ہیلپ لائن پر اطلاع دی کہ وہاں لاش پڑی ہوئی ہے جس کے بعد اُسے تحویل میں لے کر واقعے کی تحقیقات کا آغاز کیا گیا۔

سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے پولیس نے ملزم الیگزینڈر کو گرفتار کیا جس نے تفتیشی افسر کے سامنے اپنے جرم کا اعتراف کیا اور بتایا کہ ’مجھے بھول لگ رہی تھی اس لیے میں نے اپنی دوست کی ٹانگیں پکا کر کھا لیں‘۔

پولیس کے مطابق ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا اور اُسے رواں ہفتے ہی عدالت میں پیش کیا جائے گا، مجسٹریٹ کے سامنے اعتراف کرنے کے بعد الیگزینڈر کو پندرہ سال قید کی سزا ہوسکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: درندہ صفت باپ نے کمسن بیٹی کو قتل کرکے اوون میں‌ بھون دیا

دوسری جانب ملزم نے پولیس کو یہ بھی بتایا کہ وہ آدم خور ہے اور اس سے پہلے بھی کئی انسانوں کا گوشت کھا چکا ہے جن کی تعداد کا اُسے خود بھی علم نہیں ہے۔ تفتیشی افسر نے تحقیقات کا دائرہ وسیع کردیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں