The news is by your side.

Advertisement

“مودی حکومت نے کیا بڑھایا؟ بے روزگاری، غریبی اور مہنگائی”

نئی دہلی : کانگریس کے سابق صدر راہول گاندھی نے کہا ہے کہ مودی حکومت میں بے روزگاری بڑھتی ہی جا رہی ہے، اور وزیر اعظم بڑی بڑی تقریریں کرتے پھررہے ہیں۔

کانگریس کے سابق صدر راہول گاندھی نے بے روزگاری اور مہنگائی کے حوالے سے ایک بار پھر مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے ایک ٹوئٹ کیا ہے جس میں لکھا ہے کہ “اس حکومت نے کیا بڑھایا؟ بے روزگاری، مہنگائی، غریبی اور صرف اپنے متروں (دوستوں) کی کمائی۔”

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں مودی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کوویڈ19سے پہلے 9.9 کروڑ لوگ متوسط آمدنی والے گروپ کا حصہ تھے لیکن اب یہ تعداد 6.6 کروڑ تک رہ گئی ہے۔

اپنے اس ٹوئٹ کے ساتھ راہول گاندھی نے ایک رپورٹ بھی شیئر کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ متوسط آمدنی والے طبقہ سے ایک تہائی لوگ نکل گئے ہیں۔

اس رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ سال2011 سے 2019 کے درمیان7 سے 5 کروڑ لوگ ذیلی آمدنی والے طبقہ سے نکل کر متوسط آمدنی والے طبقہ کا حصہ بنے تھے۔ روزانہ ڈیڑھ سو روپے یا اس سے کم کمانے والوں کی تعداد 7.5 کروڑ جا پہنچی ہے۔

راہول گاندھی جو ان دنوں آسام کے دورہ پر ہیں۔ اپنے دورے کے دوران عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا تھا کہ وزیر اعظم نے بڑی بڑی تقریریں کی ہیں، میک اِن انڈیا، اسٹارٹ اَپ انڈیا اور الگ الگ نعرے دیئے ہیں لیکن آج ملک میں روزگار نہیں ہے اور بے روزگاری بڑھتی ہی چلی جارہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں