site
stats
سندھ

شکارپور: دوگروپوں میں مسلح تصادم، ہلاک افراد کی تعداد 13ہوگئی

شکارپور: تحصیل خانپور کے قریب گاؤں 10 میل میں جتوئی قبائل کے بڈانی اور سعد خانانی گروپوں میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد 13ہوگئی، وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال نے واقعے کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے پولیس حکام سے رپورٹ طلب کرلی۔

تفصیلات کے مطابق شکارپور کی تحصیل خان پور کے قریب گاوٴں 10 میل میں جتوئی قبا ئل کے بڈانی اورسعد خانانی گروپوں میں دیرینہ دشمنی پرتصادم ہوا جس کے نتیجے میں 13افراد کشمیرجتوئی ، نازل جتوئی ، کانڈیرو جتوئی ، سرور جتوئی ، ہزارو جتوئی ، اور متارو جتوئی اور راہگیر بچی نائلہ سمیت دیگر ہلاک ہوگئے ہیں۔

علاقہ نوگو ایریا بن چکا ہے اور پولیس جائے وقوعہ پر تاحال نہیں پہنچ سکی ہے، علاقے میں اب تک کشیدگی برقرار ہے دونوں گروپ مورچہ بند ہیں اور وقفے وقفے سے فائرنگ کا سلسلہ جاری ہے، دونوں گروپس ایک دوسرے پر جدید اسلحے سے فائرنگ کررہے ہیں۔

دونوں جانب سے مورچہ بند افراد ایک دوسرے پر راکٹ لانچرز اور ایل ایم جی جیسے خطرناک ہتھیاروں سے حملے کر رہے ہیں۔ اطلاعات ہیں کہ علاقے میں داخل ہونے کی کوشش کے دوران پولیس پر بھی حملہ کیا گیا، مزید نفری اور بکتر بند گاڑیاں طلب کر لی گئیں۔

 واضح رہے کہ اس سے قبل ہونے والے قبائلی تصادم میں اب تک دونوں گروپوں کے 20 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

دریں اثناء ڈی آئی جی عبداللہ شیخ نے ایس ایس پی قمبرساجد کو شکارپور کا اضافی چارج دیدیا ہے، انہوں نے بتایا کہ شکارپورمیں صورتحال کو معمول پر لانے کیلئے اضافی نفری اور کمانڈوز بھجوادیئے گئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top