The news is by your side.

Advertisement

سوشل میڈیا رشتوں کے لیے زہر قاتل؟

سوشل میڈیا کا استعمال ہماری زندگی کا لازمی جز بن چکا ہے۔ زندگی کا کوئی بھی مرحلہ ہو، اسے سوشل میڈیا پر رسمی و غیر رسمی دوستوں اور بعض اوقات اجنبی افراد کے ساتھ بھی شیئر کرنا ایک معمول کی بات بن چکی ہے۔

لیکن ماہرین کا متفقہ طور پر ماننا ہے کہ سوشل میڈیا کا استعمال ہماری نفسیاتی صحت پر منفی اثرات مرتب کررہا ہے۔ کم استعمال کرنے والے اس کے مضر اثرات کا شکار کم، اور زیادہ استعمال کرنے والے اس کے نقصانات کا زیادہ شکار ہیں، تاہم اس کے منفی اثرات سے کوئی بھی شخص محفوظ نہیں۔

حال ہی میں ماہرین سماجیات کی جانب سے کی جانے والی ایک تحقیق نے ان پر انکشاف کیا کہ وہ ازدواجی جوڑے جو اپنی زندگی کے معاملات سوشل میڈیا پر شیئر کرتے تھے، ایک ناخوشگوار زندگی گزار رہے تھے۔

مزید پڑھیں: سوشل میڈیا لوگوں کو سست بنا رہا ہے

انہوں نے دیکھا کہ جن جوڑوں نے اپنی ذاتی زندگی کو صحیح معنوں میں ذاتی اور خفیہ رکھا اور انہوں نے سوشل میڈیا پر اس کی تشہیر نہیں کی، وہ نسبتاً ایک خوشگوار زندگی گزار رہے تھے۔

ماہرین نے اس کی وضاحت کرتے ہوئے چند وجوہات پیش کیں جنہیں پڑھ کر آپ کو اندازہ ہوسکے گا کہ سوشل میڈیا کس طرح آپ کے ازدواجی رشتے کو نقصان پہنچا رہا ہے۔

social-media-2

گزشتہ 2 سال سے جس طرح عام تصاویر کی جگہ سیلفیاں مقبول ہوگئی ہیں، اس نے نفسیاتی و طبی ماہرین کو تشویش میں مبتلا کردیا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ سوشل میڈیا پر بہت زیادہ اپنی سیلفیز پوسٹ کرنے والے افراد نفسیاتی مسائل کا شکار ہوجاتے ہیں۔

اسی طرح اپنی تصاویر اور اسٹیٹس میں دوسروں کو ٹیگ کرنا، کمنٹس یا لائیکس حاصل کرنے کی جستجو بھی خود پسندی کو فروغ دے رہی ہے جو آگے چل کر نفسیاتی پیچیدگیوں کا سبب بن سکتی ہے۔

تحقیق کے مطابق فیس بک کا استعمال لوگوں کو خوشی کو ختم کر رہا ہے۔ ماہرین نے دیکھا کہ وہ تنہا افراد جو فیس بک کا استعمال کم کرتے تھے اور شادی کے بعد بھی انہوں نے اس عادت کو برقرار رکھا، وہ اپنے ہی جیسے حالات کا شکار افراد سے نسبتاً خوش پائے گئے۔

مزید پڑھیں: آئی فون استعمال کرنے والے ناقابل بھروسہ اور خود غرض

ماہرین کا کہنا ہے کہ اپنے ازدواجی یا دیگر رشتوں کے بارے میں مستقل سوشل میڈیا پر پوسٹنگ کرتے رہنا عدم تحفظ کے احساس کو فروغ دیتا ہے۔ ماہرین کے مطابق انہوں نے تحقیق میں دیکھا کہ وہ افراد جو اپنے رشتوں سے ناخوش یا غیر مطمئن تھے وہ اپنے رشتوں کے بارے میں سوشل میڈیا پر زیادہ پوسٹنگ کرتے تھے۔

سماجی و طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ آج کل کے جدید دور میں سوشل میڈیا اور جدید ٹیکنالوجی سے دور رہنا تو ناممکن ہے، لیکن سوشل میڈیا کا استعمال کم کرنا خصوصاً اپنی ذاتی زندگی کو اس سے دور رکھنا آپ کو بے شمار سماجی، طبی اور نفسیاتی مسائل سے بچا سکتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں