The news is by your side.

Advertisement

کراچی: رواں سال لوٹ مار کی 53ہزار سے زائد وارداتوں کا انکشاف

کراچی : شہر قائد میں رواں سال اسٹریٹ کرائمز کی 53ہزار سے زیادہ وارداتیں ہوئیں، ہزاروں موٹرسائیکل، گاڑیاں اورموبائل فون چھیننےگئے، بھتہ خوری کی 56 ،اوراغواء برائےتاوان کی دس وارداتیں ہوئیں، جبکہ جنوری سے دسمبر تک 334 شہری قتل کیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں رواں سال اسٹریٹ کرائمز میں تشویشناک حد تک اضافہ سامنے آیا ہے، شہری اسٹریٹ کرمنلز کے رحم و کرم پر آگئے۔

سٹی پولیس لیاژیان کمیٹی (سی پی ایل سی)  نے رواں سال کراچی میں ہونے والی جرائم کی وارداتوں کے اعداد وشمار جاری کردیئے۔

پچھلے چند ماہ میں کراچی میں شہریوں کے لوٹنے کی وارداتیں بڑھ گئیں ہیں، سی پی ایل سی کی رپورٹ کے مطابق رواں سال 53562 موٹرسائیکلیں، گاڑیاں اور فون چھینے وچوری کیے گئے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ شہریوں سے 25869 موبائل فونز چھینے و چوری کیے گئے، 22456 موٹرسائیکلیں چوری اورچھینی گئیں۔

رواں سال 1237 گاڑیاں چھینی وچوری ہوئیں، شہر میں 8 بینک ڈکیتیاں ہوئیں، 56 بھتہ خوری اور10اغوابرائے تاوان کی وارداتیں رپورٹ ہوئیں۔

سی پی ایل سی کی رپورٹ کے مطابق رواں سال جنوری سے نومبر تک مختلف واقعات میں334شہریوں کو قتل کیا گیا، رپورٹ کے مطابق صرف ماہ  فروری کے اٹھائیس دنوں میں چونتیس افراد فائرنگ کی زد میں آکر زندگی کی بازی ہار گئے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں