The news is by your side.

Advertisement

افغانستان: عمائدین اور رضاکاروں کے جنگ بندی کے مطالبات طالبان نے مسترد کردیے

کابل: افغانستان میں ملکی عمائدین اور رضاکاروں کی جانب سے جنگ بندی کے مطالبات طالبان نے مسترد کردیے۔

تفصیلات کے مطابق عید الفطر کے موقع پر افغان حکام نے بھی جنگ بندی میں توسیع کی بات کی تھی جسے طالبان نے مسترد کردیا تھا اور اب ملکی عمائدین اور امن کے لیے کام کرنے والے رضاکاروں کی جانب سے کیے گئے فائر بندی کے مطالبات بھی طالبان نے مسترد کردیے۔

افغان میڈیا کا کہنا ہے کہ افغان طالبان کسی صورت جنگی بندی کے حامی نہیں ہیں، ان کا موقف ہے کہ جب تک خطے میں امریکی فوج موجود ہے اس موقت تک کسی صورت جنگی بندی نہیں ہوگی اور نہ ہی کسی قسم کا امریکی فوج کے ساتھ سمجھوتہ ہوگا۔


فضل اللہ کی موت کی تصدیق، طالبان نے نیا سربراہ منتخب کرلیا


افغان طالبان کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ سوسائٹی کے افراد اور امن کے لیے سرگرم رضاکاروں سے کہا کہ وہ جنگ بندی کے حوالے سے امریکی حمایت یافتہ مہموں کا حصہ نہ بنيں، اس سے نقصان ہوسکتا ہے۔

بیان کے مطابق امريکی اور ديگر ممالک کی افواج صرف يہ چاہتی ہيں کہ طالبان ہتھيار ڈال ديں اور ان ممالک کے منظور شدہ نظام سے سمجھوتہ کر ليں جو ایسا ہم ہرگز ہونے نہیں دیں گے۔


افغانستان: طالبان کی مختلف پرتشدد کارروائیاں، 38 سیکیورٹی اہلکار ہلاک


خیال رہے کہ افغانستان ميں عيدالفطر کے موقع پر کابل حکومت اور طالبان کی جانب سے عارضی جنگ بندی کے بعد سے ملک بھر سے دوبارہ فائر بندی اور امن مذاکرات کے مطالبات سننے میں آ رہے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں