The news is by your side.

Advertisement

اسلحہ برآمدگی کیس، جے آئی ٹی تشکیل، متحدہ قیادت سے تفتیش کا امکان

کراچی: عزیز آباد سے برآمد ہونے والے اسلحہ کے معاملے پر ایم کیو ایم پاکستان سے تفتیش کرنے پر غور جاری ہے، برآمد شدہ اسلحے کے معاملے کی تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی تشکیل دینے کا فیصلہ بھی کرلیا گیا۔

اے آر وائی نیوز نمائندے نذیر شاہ کے مطابق پولیس ذرائع نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ شہر میں کئی مقامات پر اسلحے کے ذخائر موجود ہیں جن کی تلاش کے لیے اداروں کو متحرک کردیا گیا ہے تاہم سیکیورٹی اداروں نے بھی اسلحے کے ذخائر کی کھوج لگانا شروع کردی ہے۔

پولیس ذرائع نے کہا کہ برآمد کیے گئے اسلحے کی تفتیش کے لیے باقاعدہ جے آئی ٹی تشکیل دے دی گئی ہے اور اس حوالے سے ایم کیو ایم پاکستان کی قیادت سے تحقیقات کرنے پر غور جاری ہے۔

پڑھیں: عزیزآباد،زیرزمین ٹینک سے بھاری مقدارمیں اسلحہ برآمد

 تفتیشی ذرائع نے کہاکہ عزیز آباد میں شہر کی تاریخ کا سب سے بڑا ذخیرہ برآمد کیا گیا ہے، جو زیر زمین ٹینک میں چھپایا گیا تھا، 120 گز پر موجود گھر میں تعمیر کیے گئے ٹینک کو محض اسلحہ اور بارود کو چھپانے کے لیے بنایا گیا تھا کیونکہ اس میں پانی کی لائن موجود نہیں تھی۔

ذرائع نے اس بات کا بھی انکشاف کیا کہ مکان میں ٹینک فرنٹ پر تیار کیا گیا تھا جبکہ دیگر گھروں میں یہ پچھلے حصے میں تعمیر کیاجاتاہے اور اس میں ہوا کے گزرنے کا باقاعدہ سسٹم بنایا گیا تھا تاکہ بارود اور اسلحے کی بو کو پھیلنے سے روکا جاسکے۔

مزید پڑھیں:  عزیز آباد سے پکڑا جانے والااسلحہ پاک فوج کے سپرد

 پولیس کے مطابق حساس ادارے کی خفیہ اطلاع پر مکان میں کارروائی کی گئی جہاں فرش بالکل پکا تھا، تاہم اہلکاروں نے چیک کھوکھلے پن کا اندازہ لگا کر کھدائی کا عمل شروع کیا تو اندر سے اسلحے کا بڑا ذخیرہ موجود تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  عزیز آباد سے برآمد اسلحہ بڑی لڑائی میں استعمال ہونا تھا، ڈی جی رینجرز

 قبل ازیں ڈی آئی جی ویسٹ اور ایس ایس پی سینٹرل کی موجودگی میں عزیزآباد کے خالی مکان میں اسلحے کی موجودگی کے شک پر آج پھر کھدائی کی گئی، بعد ازاں پولیس کی جانب سے متعلقہ گھر کو سیل کردیا گیا۔

دوسری جانب  وزیر اعلی سندھ مرار علی شاہ نے عزیز آباد کے مکان اسلحہ کا زخیرہ برآمد کرنے والی پولیس پارٹی کے لئیے پچاس لاکھ روپے انعام کا اعلان کیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں