تازہ ترین

لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کی چیئرمین نادرا تعیناتی کی منظوری

نگران وزیراعظم انوارالحق کاکڑ کی زیرصدارت ہونے والے وفاقی...

مستونگ دھماکے میں ’را‘ ملوث ہے، نگراں وزیر داخلہ سرفراز بگٹی

اسلام آباد : نگراں وزیر داخلہ سرفراز بگٹی کا...

9 مئی واقعات : چیئرمین پی ٹی آئی کی 9 ضمانت کی درخواستیں منظور

اسلام آباد : اسلام آباد ہائی کورٹ نے 9...

نواز شریف نے 4 سال بعد وطن واپسی کیلئے ٹکٹ بک کروالیا

لندن : مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف...

غیر مشروط معافی مسترد، توہین عدالت کیس میں ڈی سی اسلام آباد سمیت دیگر پر فرد جرم عائد

اسلام آباد: اسلام آباد ہائیکورٹ نے ڈی سی اسلام آباد سمیت دیگر کی غیر مشروط معافی مسترد کرتے ہوئے ان پر فرد جرم عائد کر دی۔

تفصیلات کے مطابق شہریار آفریدی کے خلاف ایم پی او آرڈر میں اختیارات سے تجاوز پر توہین عدالت کے کیس میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے ڈپٹی کمشنر عرفان نواز میمن، ایس ایس پی آپریشنز جمیل ظفر، ڈی پی او فاروق بٹر اور ایس ایچ او ناصر منظور پر فرد جرم عائد کر دی۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس بابر ستار نے چاروں افسران کو فرد جرم پڑھ کر سنائی، کمرہ عدالت میں روسٹرم پر موجود تمام افسران کی حاضری بھی لگائی گئی، عدالت نے ڈی سی اسلام آباد سے استفسار کیا کہ کیا آپ نے الزامات سن لیے ہیں؟ تاہم ڈپٹی کمشنر اسلام آباد عرفان نواز میمن نے صحت جرم سے انکار کر دیا، جس پر جسٹس بابر ستار نے ریمارکس دیے کہ کھلی عدالت میں چارج شیٹ پڑھی گئی ہے جو کچھ بھی ہے اب ٹرائل میں ثابت کرنا۔

جسٹس بابر ستار نے ایس ایس پی جمیل ظفر کو بھی چارج شیٹ پڑھ کرسنائی اور پوچھا کہ کیا آپ دفاع پیش کرنا چاہتے ہیں؟ ایس ایس پی آپریشنز نے کہا مجھے وقت دیا جائے، ڈی پی او امجد فاروق بٹر اور ایس ایچ او ناصر منظور نے بھی صحت جرم سے انکار کر دیا۔

کیس میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے وکیل قیصر امام کو پراسیکیوٹر تعینات کر دیا، اور تمام افسران کو دستخط کرنے کی ہدایت کی۔

Comments

- Advertisement -