The news is by your side.

Advertisement

پاک بھارت تعلقات میں کوئی پیشرفت نہیں ہورہی، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ دنیا کو پیغام دینا چاہتا ہوں کہ ہر ملٹری کارروائی کے نتائج ٹھیک نہیں ہوتے، میں ڈپلومیسی اور ڈائیلاگ پر یقین رکھتا ہوں۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے آسٹریلوی میڈیاکو انٹرویو دیا ، جس کے میزبان آسٹریلیا کے سابق کپتان گریک چیپل تھے، جنہوں نے وزیراعظم سے آسٹریلیا کے دورہ پاکستان، پاک بھارت تعلقات اور دیگر اہم ایشوز سے سوالات کئے۔

آسٹریلوی سابق کپتان گریک چیپل نے وزیراعظم سے بھارت سے تعلقات کے بارے میں سوال کیا جس پر وزیراعظم نے کہا کہ بھارت میں نسل پرست ہندوتوا حکومت ہے،جس کی وجہ سے بھارت میں اقلیتوں خاص طور پر مسلمانوں کیلئے نفرت بڑھتی جارہی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاک بھارت تعلقات میں کوئی پیش رفت نہیں ہو رہی ہے اور کرکٹ بھی متاثرہو رہی ہے، دونوں ممالکے کے تعلقات میں پیش رفت نہ ہونے سے مشترکہ طورپر نقصان ہورہا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے اپنے انٹرویو میں کہا کہ پاکستان کرکٹ سےمحبت کرنےوالی قوم ہے، پاکستانی دہشتگردی کے باعث کئی سال انٹرنیشنل کرکٹ کی میزبانی سےمحروم رہا، حالات سازگار کرنے کے لئے ہماری حکومت نے ملک کےاندر سیکورٹی کو بہتر بنایا۔

کینگروز ٹیم کے دورہ پاکستان پر وزیر اعظم نے کہا کہ ہم آسٹریلین کرکٹ ٹیم کے دورہ پاکستان کا انتظار کافی عرصے سےکررہےتھے، قوم آسٹریلیا کےساتھ سیریز کا جوش وخروش کیساتھ انتظار کررہی تھی، پاکستان کا دورہ کرنے والی آسٹریلوی ٹیم کوصدارتی سطح کی سکیورٹی دی جا رہی ہے۔

گریک چیپل کو دئیے گئے انٹرویو میں وزیراعظم نے کہا کہ فیصلہ کن میچ تب ہوں گے جب پچز اچھی بنائی جائیں گی، سیاسی مصروفیات کےباعث کرکٹ دیکھنےکا وقت نہیں ملتا، اخبار میں چیزیں پڑھتا رہتا ہوں۔

اپنے انٹرویو میں وزیراعظم کہا کہ دنیا کو پیغام دیناچاہتا ہوں کہ ہر ملٹری کارروائی کے نتائج ٹھیک نہیں ہوتے، میں ڈپلومیسی اور ڈائیلاگ پر یقین رکھتاہوں، کیونکہ عالمی سطح پر عدم استحکام سےترقی پزیرممالک پربراہ راست اثرپڑتاہے اور بڑھتی قیمتیں لوگوں کومزید غربت کےنیچےدھکیل دیتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں