The news is by your side.

Advertisement

‘کشمیری ہمیشہ خاموش نہیں رہیں گے’

نیویارک : امریکی میگزین فارن پالیسی نے کہاہے کہ کشمیری ہمیشہ خاموش نہیں رہیں گے ، وہ چاہتے ہیں کہ دنیا جان لے کہ وہ فائٹ بیک کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی میگزین فارن پالیسی نے مقبوضہ کشمیرسے متعلق رپورٹ میں کہا ہے کہ کشمیری ہمیشہ خاموش نہیں رہیں گے، کشمیری چاہتے ہیں کہ دنیا جان لے کہ وہ فائٹ بیک کریں گے۔

امریکی میگزین کا کہنا تھا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیرمیں سیاستدانوں،وکلا،صحافیوں سول سوسائٹی ارکان کوگرفتارکیا، انٹرنیٹ، موبائل سروس بند کرکے کمیونیکیشن کا شٹ ڈاؤن کیا گیا، بھارتی حکومت کے اقدامات کا مقصد معلومات کومقبوضہ وادی سے باہرآنا روکنا تھا۔

رپورٹ میں بتایا گیا مقبوضہ کشمیرکی خصوصی حیثیت ختم کرنے سے قبل پلواما میں بھارتی فوج نے کریک ڈاؤن کیا گیا، عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ بھارتی فورسز کی جانب سے کشمیری نوجوانوں کوسڑکوں پرگھیسٹا اورہندو مذہبی نعرے لگانے پر مجبور کیا جارہا ہے۔

گذشتہ روز نیویارک ٹائمز نےمقبوضہ کشمیرپرخصوصی رپورٹ میں کہا تھا کہ بھارت نےدنیا کومقبوضہ کشمیرکی صورتحال سے بےخبر رکھنے کیلئے ہرممکن حربہ استعمال کیا لیکن ناکام رہا۔

مودی سرکارنے کشمیرکودنیا سے کاٹ رکھا ہے، بھارتی فوجی کشمیر کی سڑکوں پر شہریوں کو پیلٹ گنز، آنسو گیس سے نشانہ بنارہے ہیں، بھارتی حکام کا اپنا دعویٰ ہے کہ 2 ہزار کشمیریوں کو حراست میں لیا ہے، نوجوانوں کوبغیروجہ بتائےگرفتارکیا جارہاہے۔گھروالوں کوکچھ پتا نہیں چل رہا کہ ان کے پیارے کہاں ہیں۔

مزید پڑھیں : امریکی جریدے نیویارک ٹائمز نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا پول کھول دیا

نیویارک ٹائمز کا کہنا تھا کہ کشمیریوں کو جھکانا ہندو انتہا پسندوں کا پرانا خواب ہے، مقبوضہ کشمیر بھارت کی واحد مسلم اکثریت آبادی ہے، کشمیریوں کی بھارت کے خلاف جدوجہد دیہائیوں سے جاری ہے، وادی میں ’کشمیر کا حل صرف بندوق‘ کے نعروں کی گونج ہے، کشمیر کی سرحد کے دونوں پار صورت حال خطرناک ہے۔

رائٹرز نے دکھایا کہ کس طرح کشمیری خواتین،بچے اورنوجوان آزادی کے لئے شہادت کے جذبے سے سرشارمقبوضہ وادی کی سڑکوں پروقت کے فرعون کوچیلنج کررہے ہیں، سرینگرسمیت ہرگلی کوچے میں ایک ہی نعرہ گونج رہا ہے۔

وائس آف امریکا نے مقبوضہ کشمیرکی اصل صورتحال دکھائی، کشمیری نوجوانوں پربھارتی فورسزکی فائرنگ اورپیلیٹ گنزکے استمعال سے متعددنوجوان زخمی ہوئے، اپنے لہوسے آزادی کی تحریک کوآگے بڑھانے والے کشمیریوں کی آواز دبانا اب بھارت سرکار کیلئے ممکن نہیں رہا۔

خیال رہے مقبوضہ کشمیرمیں بیس روزسے جاری مسلسل کرفیونے کشمیریوں کوگھروں میں قید کررکھا ہے۔ مقبوضہ کشمیرسے گرفتارمزیدتیس کشمیری نوجوانوں کوآگرہ جیل منتقل کردیا گیا ہے ، مسلسل لاک ڈاؤن سے لوگوں کو دواؤں اورکھانے پینے کی اشیاء کی شدید قلت کا سامنا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں