سابق مشیرخزانہ بلوچستان خالد لانگونے استعفیٰ واپس لے لیا -
The news is by your side.

Advertisement

سابق مشیرخزانہ بلوچستان خالد لانگونے استعفیٰ واپس لے لیا

کوئٹہ : سابق مشیر خزانہ بلوچستان خالد لانگو نے بلوچستان اسمبلی کی رکنیت سے استعفیٰ دینے کے بعد وزیر اعلیٰ کی ہدایت پر استعفیٰ واپس لے لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مشہور زمانہ مشتاق رئیسانی کرپشن کیس میں گرفتار سابق مشیر خزانہ خالد لانگو نے اسمبلی میں خطاب میں بلوچستان اسمبلی کی رکنیت سے مستعفیٰ ہونے کا اعلان کیا،انہوں نے کہا کہ اگر میں نے کرپشن کی ہے تو مجھے اس اسمبلی میں بیٹھنے کا کوئی حق نہیں‌ ہے،سیکرٹری خزانہ مشتاق رئیسانی کی گرفتاری کے بعد میں نے بہ طور مشیر خزانہ مستعفی ہو کر کیس کا سامنا کرنے کی پیشکش کی تھی۔

یہ خبر پڑھیں : مشیر خزانہ بلوچستان میرخالد لانگو کو عدالت سے گرفتار کر لیا گیا

واضح رہے سابق مشیر خزانہ بلوچستان خالد لانگو مشاتق رئیسانی کرپشن کیس میں گرفتار ہیں اور انہیں بکتر بندگاڑی میں اسمبلی لایا گیا ،اسمبلی پہنچ کر سابق مشیر خزانہ نے اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کی اور رکنیت سے مستعفیٰ ہونے کا اعلان کر کےاسمبلی سے باہر چلے گئے تا اہم وزیراعلیٰ بلوچستان ثناء اللہ زہری کی مداخلت پر استعفیٰ واپس لے لیا۔

یہ خبر بھی پڑھیں : نیب نے سیکرٹری خزانہ بلوچستان مشتاق احمد رئیسانی کو گرفتارکرلیا

اس موقع پر خالد لانگو نے کہا کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان ثناء اللہ ذہری نہ صرف وزیر اعلیٰ ہیں بلکہ میرے سردار بھی ہیں اس لیے اپنے بڑوں کی ہدایت پر استعفیٰ واپس لیتا ہوں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں