The news is by your side.

Advertisement

مسلم لیگ ن کے رہنما نے ساتھیوں‌ سمیت تحریک انصاف میں‌ شمولیت کا اعلان کردیا

اسلام آباد: آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والے مسلم لیگ ن کے رہنما نے ساتھیوں سمیت تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرلی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والے پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما سردار امتیاز طاہر نے جمعے کے روز وزیراعلیٰ پنجاب کے معاونِ خصوصی کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس کی۔

انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ساتھیوں سمیت تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا اور مسلم لیگ ن کو خیر باد کہا۔

سردار امتیاز نے تحریک انصاف کے منشور اور وزیراعظم عمران خان کی پالیسیوں پر مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے آئندہ پی ٹی آئی کے پلیٹ فارم سے عوامی خدمت جاری رکھنے کا اعلان بھی کیا۔

مزید پڑھیں: سیاسی شخصیات کی وزیراعظم سے ملاقات، تحریک انصاف میں‌ شمولیت کا اعلان

یہ بھی پڑھیں: لاڑکانہ، پی پی عہدیداران کا تحریک انصاف میں‌ شمولیت کا اعلان

اسے بھی پڑھیں: وزیرِ اعظم سے شاہ محمود اور ممتاز سیاست دان ملک ظفر راں کی ملاقات، پی ٹی آئی میں شمولیت

معاون خصوصی وزیراعلیٰ پنجاب سردارتنویرالیاس نے کہا کہ ’مسلم لیگ ن نے پانچ سالہ دورِ حکومت میں تاریخی غلطیاں کیں، جن کا خمیازہ ہمیں معلوم نہیں کب تک بھگتنا پڑے گا‘۔

سردار تنویر الیاس کا کہنا تھا کہ ’آزادکشمیر کی حکومت صاف شفاف انتخابات نہیں چاہتی کیونکہ وہ اپنے دور کو توسیع دینے کی خواہش مند ہے‘۔

انہوں نے بتایا کہ ’راجہ امتیاز طاہر نے آج  پی ٹی آئی میں ساتھیوں سمیت شمولیت اختیارکی، وہ آزاد کشمیر کی سیاست میں اپنی منفرد پہچا رکھتے ہیں،پی ٹی آئی کے  اقدامات اور عوامی سیاست کی وجہ سے بلاول بھٹو، راجہ فاروق حیدر مایوس ہیں، یہ مایوسی اُن کے چہروں پر عیاں ہے‘۔

یاد رہے کہ 29 مئی کو آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والی سیاسی شخصیات نے وزیراعظم عمران خان سے اسلام آباد میں ملاقات کی اور پھر تحریک انصاف میں شمولیت کا باقاعدہ اعلان کیا تھا۔ شمولیت اختیار کرنے والوں میں آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والی سیاسی شخصیات علی شان، علی رضا، صغیر چغتائی، انوارالحق اور شہزاد چوہدری شامل تھے۔

اسے بھی پڑھیں:  سیاسی شخصیات کی وزیراعظم سے ملاقات، تحریک انصاف میں‌ شمولیت کا اعلان

یہ بھی پڑھیں: آزاد کشمیر انتخابات، پی ٹی آئی امیدواروں کے ناموں کا اعلان ہوگیا

آزاد کشمیر کی سیاسی شخصیات نے عمران خان کی قیادت  اور تحریک انصاف کی پالیسیوں پر بھرپور اعتماد کا اظہار کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں