The news is by your side.

Advertisement

وینزیلابحران، موجودہ حکومت کے گرد مزید گھیرا تنگ

کراکس: وینزویلا میں جاری سیاسی بحران میں موجودہ حکومت کے گرد مزید گھرا تنگ ہوگیا، امریکا نے ملکی وزیرخارجہ خورگے اریزا پر پابندی عائد کردی۔

تفصیلات کے مطابق جنوبی امریکی ملک وینزویلا ان دنوں شدید سیاسی ومعاشی بحران کا شکار ہے، جبکہ امریکا نے ملکی حکومت کے بجائے اپوزیشن کا ساتھ دینے کا اعلان کررکھا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ امریکا نے وینزویلا کے وزیرخارجہ پر پابندی عائد کرتے ہوئے کہا کہ ’خورگے اریزا‘ سفارت کاری کے ساتھ ساتھ صدر نکولاس مادورو حکومت کی بدعنوانیوں پر پردہ ڈالنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔

امریکا نے اعلان کیا ہے کہ ملکی صدر مادورو کے اندرونی حلقوں میں بدعنوان عناصر کو ہدف بنانے کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا، وزیرخارجہ پر پابندی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔

دوسری جانب حکومت نے ملکی اپوزیشن کے خلاف کریک ڈاؤن کا سلسلہ بھی جاری رکھا ہوا ہے، ذرائع نے اپوزیشن لیڈر جون گائیڈو کی گرفتاری کے بھی امکانات ظاہر کیے ہیں۔

یاد رہے کہ وینزویلا میں 23 جنوری کو اپوزیشن لیڈر اور پارلیمںٹ کے اسپیکر جون گائیڈو نے خود کو عبوری صدر قرار دیا تھا جس کے بعد امریکا اور بعض دوسرے علاقائی ممالک نے صدر نکولس مادورو کی جگہ گائیڈو کو ملک کا عبوری صدر تسلیم کرلیا ہے۔

وینزویلا کے خودساختہ صدر پر نئی پابندی عائد

خیال رہے کہ امریکا سمیت کئی یورپی ممالک کی حمایت حاصل کرنے والے جون گائیڈو نے گذشتہ ماہ لاطینی امریکی ممالک کا دورہ کیا تھا اس دوران انہوں نے ملک میں جاری بحران پر تبادلہ خیال بھی کیا تھا۔

وینزویلا میں جاری سیاسی بحران کے پیش نظر روس مقامی حکومت کا ساتھ دے رہا ہے، جبکہ امریکا نے روس کو خبردار کیا ہے کہ وہ کسی بھی اقدامات سے باز رہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں