یمن میں عام شہریوں پر حملہ، سعودی اتحادی افواج نے الزامات مسترد کردیے
The news is by your side.

Advertisement

یمن میں عام شہریوں پر حملہ، سعودی اتحادی افواج نے الزامات مسترد کردیے

ریاض: یمن میں ہونے والے ایک حملے کے نتیجے میں درجنوں شہریوں کی ہلاکتوں کا الزام سعودی اتحادی افواج نے مسترد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ دنوں یمنی صوبہ صعدہ میں سعودی اتحادی افواج کی جانب سے فضائی بمباری کی گئی تھی، جس کے نتیجے میں متعدد عام شہریوں کی ہلاکتیں ہوئی تھیں۔

عرب میڈیا کے مطابق عرب اتحاد کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ مذکوہ حملہ حوثی باغیوں کی موجودگی کی اطلاعات پر کیا گیا تاہم اس حملے میں عام شہری ہلاک نہیں ہوئے۔

عرب اتحاد کی واقعات کا جائزہ لینے والی مشترکہ ٹیم ( جیاٹ) نے یمن کے شمالی صوبے صعدہ میں ایک عمارت پر بمباری سے متعلق عام شہریوں کی ہلاکتوں کے الزامات کو تحقیقات کے بعد مسترد کیا ہے۔


سعودی فوج نے جازان میں حوثیوں کا بیلسٹک میزائل مار گرایا


سعودی دارالحکومت ریاض میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عرب اتحاد کی مشترکہ ٹیم نے حملے کا نشانہ بننے والے عمارت کی تصاویر بھی صحافیوں کو دکھائی ہیں، جہاں عرب اتحاد نے فضائی بمباری کی تھی۔

مذکورہ عمارت کے بارے میں بعض بین الاقوامی تنظیموں نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ یہ شہریوں کے مکانوں سے متصل واقع تھا لیکن صحافیوں کی دکھائی جانے والی تصاویر میں دیکھا گیا کہ یہ مکان آبادی سے الگ تھلگ ایک دور دراز علاقے میں واقع ہے۔

خیال رہے کہ آج عرب اتحادی فوج کے ترجمان ترکی المالکی نے بتایا کہ حوثی باغیوں کی جانب سے یمن سے جازان میں داغا گیا بیلسٹک میزائل مار گرایا، اس واقعے میں کسی قسم کے جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں