The news is by your side.

Advertisement

وینزویلا کے خودساختہ صدر پر نئی پابندی عائد

کراکس: وینزویلا کے خودساختہ صدر اور اپوزیشن لیڈر جون گائیڈو پر حکام نے نئی پابندی عائد کردی۔

تفصیلات کے مطابق کراکس حکام کی جانب سے جون گائیڈو پر نئی پابندی عائد کی ہے جس کے تحت وہ اگلے 15 سالوں تک کوئی بھی سیاسی یاحکومتی عہدہ حاصل نہیں کرسکیں گے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ اپوزیشن لیڈر پر سفری پابندی بھی عائد ہے لیکن اس کے باوجود انہوں نے گذشتہ ماہ بیرون ملک سفر کیا۔

کراکس حکام کے مطابق جون گائیڈو نے غیر ممالک کے ساتھ مل کر وینزویلا میں فساد پھیلانے اور عوام کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی جس کے تحت پابندی عائد کی گئی۔

علاوہ ازیں ان کی آمدن کے حوالے سے بھی شکوک و شبہات پائے جاتے ہیں، جس کے بارے میں حکام نے جلد تحقیقات کا عندیہ دیا ہے۔

امریکا سمیت کئی یورپی ممالک کی حمایت حاصل کرنے والے جون گائیڈو نے گذشتہ ماہ لاطینی امریکی ممالک کا دورہ کیا تھا اس دوران انہوں نے ملک میں جاری بحران پر تبادلہ خیال بھی کیا تھا۔

وینزویلا میں جاری سیاسی بحران کے پیش نظر روس مقامی حکومت کا ساتھ دے رہا ہے، جبکہ امریکا نے روس کو خبردار کیا ہے کہ وہ کسی بھی اقدامات سے باز رہے۔

امریکی دھمکیوں کے باوجود روسی فوج وینزویلا پہنچ گئی

یاد رہے کہ وینزویلا میں 23 جنوری کو اپوزیشن لیڈر اور پارلیمںٹ کے اسپیکر جون گائیڈو نے خود کو عبوری صدر قرار دیا تھا جس کے بعد امریکا اور بعض دوسرے علاقائی ممالک نے صدر نکولس مادورو کی جگہ گائیڈو کو ملک کا عبوری صدر تسلیم کرلیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں